گرے ٹریفکنگ غیر قانونی سموں کیخلاف اقدامات سے متعلق رپورٹ طلب

July 24, 2015 4:43 pm0 commentsViews: 26

جب تک عدالت نوٹس نہ لے حکومت کوئی اقدام نہیں کرتی‘ عوام کا کوئی تو پرساں حال ہونا چاہئے‘ جسٹس جواد ایس خواجہ
غیر قانونی سموں پر قابوپالیا جاتا تو پشاور اسکول جیسا واقعہ نہ ہوتا‘ جسٹس دوست محمد خان‘پی ٹی اے سے نرخوں سے متعلق رپورٹ بھی طلب
اسلام آباد( نیوز ڈیسک) گرے ٹریفکنگ کیس میں سپریم کورٹ نے غیر تصدیق شدہ سموں اورکال نرخوں کے حوالے سے ماضی اور موجودہ نرخوں کے موازنہ کے بارے میں پی ٹی اے سے رپورٹ طلب کر لی جبکہ وفاقی وزارت داخلہ سے غیر قانونی سموں کے خلاف اب تک کئے گئے اقدامات پر رپورٹ بھی مانگ لی ہے یہ حکم جسٹس جواد ایس خواجہ کی سربراہی میں2 رکنی بنچ نے جاری کیا ہے جسٹس جواد ایس خواجہ نے ریمارکس دئیے ہیں کہ جب تک عدالت کوئی نوٹس نہ لے حکومت کوئی بھی اقدام نہیں کرتی عوام کا کوئی تو پر سان حال ہونا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ حکومتیں کام ٹھیک طرح سے نہیں کرتیں اور تمام تر ملبہ ماضی کی حکومتوں پر ڈال دیا جاتا ہے جسٹس دوست محمد خان نے کہا کہ غیر قانونی سمیں دہشت گردی اور دیگر جرائم میں استعمال ہو رہی ہیں اگر غیر تصدیق شدہ سموں پر قابو پالیا جاتا تو پشاور اسکول جیسا سانحہ کبھی نہ ہوتا۔ جسٹس دوست محمد نے کہا کہ خیبر پختونخوا میں سترہ لاکھ غیر قانونی سمیں کام کر رہی ہیں جبکہ بیس لاکھ غیر قانونی سمیں بھی کام کر رہی ہیں مختلف موبائل کمپنیاں افغان سموں کو سروسز فراہم کر رہی ہیں۔

Tags: