نالوں پر تجاوزات قائم ہیں شدید بارشوں میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے‘ وزیر اعلیٰ سندھ

July 24, 2015 5:05 pm0 commentsViews: 21

صوبائی ڈیزاسٹرمینجمنٹ اتھارٹی‘ کراچی میٹرو پولیٹن کارپوریشن اور مقامی انتظامیہ کو پانی کی نکاسی کا ٹاسک دیا ہے
سندھ سیاسی اور انتظامی لحاظ سے مستحکم ہے‘ قائم علی شاہ کی گجر نالہ اور دیگر مقامات کے دورے پر میڈیا سے گفتگو
کراچی ( اسٹاف رپورٹر) وزیر اعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ نے کہا کہ صوبائی ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی، کراچی میٹرو پولیٹن کارپوریشن ( کے ایم سی) اور کراچی کی مقامی انتظامیہ کو بارش کے پانی کی نکاسی کا ٹاسک دیا گیا ہے۔ انہوں نے یہ بات گجر نالہ پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہی جہاں پر وہ ممکنہ شدید بارشوں، نکاسی آب کے نالوں کے جاری صفائی کے کام کا معائنہ کرنے کیلئے پہنچے تھے۔ اس موقع پروزیر اعلیٰ سندھ کے معاونین خصوصی وقار مہدی، راشد ربانی، کمشنر کراچی شعیب احمد صدیقی، ایڈیشنل آئی جی کراچی مشتاق مہر، ایم ڈی واٹر بورڈ ہاشم رضا زیدی، ڈائریکٹر کے ایم سی مسعود عالم اور دیگر متعلقہ افسران بھی ان کے ہمراہ کراچی شہر کے دورے کے دوران ان کے ہمراہ تھے۔ انہوں نے کہا کہ چند سال قبل جب مصطفیٰ کمال شہر کے میئر تھے تو ہم نے نکاسی آب کے نالوں پر قائم تجاوزات کے خاتمے کی منصوبہ بندی کی تھی مگر بعض ناگزیر وجوہات کے باعث یہ مکمل نہ ہو سکا۔ جس کے باعث بارش کے پانی اور نکاسی آب کے حوالے سے مسائل کا سامنا رہا۔ انہوں نے کہا کہ غیر معمولی اور شدید بارشوں کی صورت میں ہمیں مشکلات کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔ جو کہ میرے خیال میں ایسی صورتحال میں ترقی یافتہ ممالک کو بھی مشکلات کا سامنا ہوتا ہے ایک اور سوال کے جواب میں وزیر اعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ نے جو کہ پی پی سندھ کے صدر بھی ہیں نے کہا کہ سندھ سیاسی اور انتظامی لحاظ سے اسٹیبل ہے سندھ کی سیاسی صورتحال کے حوالے سے ہمیشہ حکمران پی پی جماعت کے جمہوری سیاسی جماعتوں کے ساتھ بہتر تعلقات ہیں سندھ کابینہ اور بیورو کریسی میں ردو بدل سے متعلق وزیر اعلیٰ سندھ نے کہا کہ انتظامی حوالے سے بہتری کی گنجائش ہوتی ہے اور کہا کہ یہ ایک روٹین کا عمل ہے۔ سرکاری اداروں میں کرپشن کی شکایات سے متعلق ایک سوال کے جواب میں وزیر اعلیٰ سندھ نے مذکورہ صحافیوں سے اس سلسلے میں اتفاق نہ کرتے ہوئے اس کی تردید کی۔ انہوں نے کہا کہ یہ صرف پی پی ہے جس نے ہمیشہ کرپشن کے خلاف جدوجہد کی اور ان کے خلاف ایکشن لیا انہوں نے کہا کہ وہ پی پی کی حکومت تھی جس نے محکمہ تعلیم کے9 افسران بشمول گریڈ19 کے افسران کو کرپشن کے الزامات پر برطرف کیا۔ انہوں نے کہا کہ کے ایم سی کے سابق ایڈمنسٹریٹر کے خلاف انکوائری ایک سال سے ہو رہی ہے اور اگر وہ کسی غلط کام میں ملوث پائے گئے تو ان کا چالان کیا جائے گا۔ آگے معاملہ عدالت پر ہوگا۔ ایم کیو ایم کی سیاست سے متعلق سوال کے جواب میں وزیر اعلیٰ سندھ نے کہا کہ ایم کیو ایم کو کراچی میں مینڈیٹ حاصل ہے انہوں نے کہا کہ کسی بھی سیاسی جماعت میں کرمنل عناصر نہیں ہونے چاہئیں۔ انہوں نے گجر نالہ، کلری نالہ اور شہید بے نظیر بھٹو پارک بوٹ بیسن پر بارش کے پانی کے نکاسی نالے کا دورہ اور معائنہ کیا اور متعلقہ افسران کو ہدایت کہ وہ کام کی رفتار کو تیز کریں۔ وزیر اعلیٰ سندھ مقامی لوگوں کے ساتھ کلری نالہ لیاری کے اندر تک گئے اور ڈی سلٹنگ کے حوالے سے ہونے والے کام کی سست رفتاری پر اپنی برہمی کا اظہار کیا۔

Tags: