کراچی کی تاریخ میں 3 مرتبہ بارشوں سے تباہی برپا ہوئی

July 27, 2015 4:17 pm0 commentsViews: 86

2009 میں ہونے والی طوفانی بارش سے سیلاب آچکا ہے‘ 1977 میں 209 ملی بارش ریکارڈ کی گئی
28 جولائی 2007 میں تیز طوفانی بارش سے زندگی مفلوج اور درجنوں افراد ہلاک و زخمی ہوئے
کراچی( یو پی پی) کراچی کی تاریخ میں 3 انتہائی تیز بارشوں کی وجہ سے شہری زندگی مفلوج اور درجنوں افراد جاں بحق ہو چکے ہیں۔ 2009ء میں ہونے والی طوفانی بارش سے شہر میں سیلاب بھی آچکا ہے۔ تفصیلات کے مطابق شہر کی تاریخ میں3بار انتہائی تیز طوفانی بارش ہو چکی ہیں حاصل کر دہ معلومات کے مطابق1977 میں207 ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی جو کہ ایک ہفتے تک جاری رہی تھی۔ 28 جولائی2007ء میں بھی تیز بارش ہوئی تھی جس سے نظام زندگی درہم برہم ہو کر رہ گیا تھا۔ محکمہ موسمیات کے مطابق93 ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی تھی،19 جولائی2009ء کو بھی شہر میں طوفانی بارش ہوئی تھی جو کہ تین روز تک جاری رہی تھی اس کے نتیجے میں کھارا در، رامسوامی، برنس روڈ پر مخدوش عمارتیں گرنے کرنٹ لگنے اور حادثات میں درجنوں افراد جاں بحق ہوگئے تھے جن کی تعداد سرکاری طور پر ڈیڑھ سو سے زائد بتائی گئی تھی۔ محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ شہر میں مجموعی بارش کا ریکارڈ142 ملی میٹر تھا جبکہ205ملی میٹر مسرور بیس، 189 ملی میٹر صدر اور 142 ملی میٹر ایئر پورٹ سے ریکارڈ کی گئی تھی۔ 7 دسمبر 2012ء کو بھی شہر میں طوفانی بارش ہوئی تھی جو کہ62 ملی میٹر ریکارڈ کی گئی تھی۔

گندے ترین شہروں کی فہرست
میں کراچی کا پانچواں نمبر
اسلام آباد( مانیٹرنگ ڈیسک) ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن نے دنیا بھر کے120 آلودہ شہروں کی فہرست جاری کر دی ہے جس کے مطابق 20 گندے ترین شہروں میں کراچی پانچویں، پشاور چھٹے جبکہ راولپنڈی ساتویں نمبر پر ہے۔ رپورٹ میں 91 ممالک کے1600 شہروں کا تجزیہ کیا گیا۔ جس کے مطابق بھارتی دار الحکومت نئی دہلی دنیا کا آلودہ ترین شہر قرار پایا۔ 20 ممالک کی اس فہرست میں خاص طور پر 13 بھارتی شہر شامل ہیں۔ جبکہ آلودہ شہروں میں بنگلہ دیش، ایران، قطر اور ترکی کے ایک شہر نے بھی اپنی جگہ بنائی ہے۔

Tags: