ملک میں تبدیلی کا واحد علاج صرف انقلاب ہے، ابولحیات شاہ

July 28, 2015 5:11 pm0 commentsViews: 24

لٹیرے سیاستدانوں نے ملک کو لوٹ کا مال سمجھا ہوا ہے، اجتماع سے خطاب
کراچی (اسٹاف رپورٹر)پاکستان میں جمہوری طریقے سے تبدیلی ممکن نہیں ہے، لٹیرے سیاستدانوں نے ملک کو لوٹ کا مال سمجھا ہوا ہے، کرپٹ مافیا و لینڈ مافیا سب متحد ہوچکے ہیں، ان کا واحد علاج صرف انقلاب ہے، یہ بات پاکستان جسٹس پارٹی کے چیئرمین ابوالحیات شاہ نے کارکنوں کے مرکزی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ انہوں نے کہا کہ ملک کی معیشت کی صورتحال انتہائی تشویشناک ہے، پچھلے 60 سالوں میں ملکی معیشت سے 15 ہزار ارب روپے نکالے گئے ہیں، جبکہ قحط غربت سے نیچے زندگی گزارنے والے افراد کی تعداد 50 ملین سے بڑھ کر 120 ملین ہوگئی ہے اور حکومت سب ٹھیک کا لاگ الاپ رہی ہے اور دعوے کیے جارے ہیںکہ ملک میں زرمبادلہ کے ذخائر میں اضافہ ہوا ہے، حالانکہ اس میں حکومت کا کوئی کمال نہیں ہے، بین الاقوامی مارکیٹ میں پچھلے 3 سالوں سے تیل کی قیمتیں مسلسل کم ہورہی ہیں اور اب تک 60 فیصد کمی آچکی ہے، جس کی وجہ سے تیل کی درآمد میں زرمبادلہ خرچ ہوا ہے، انہوں نے کہا کہ اس ملک کے وزیر اعظم نواز شریف سے جیسے شریف اور اپوزیشن پارٹی کے سربراہ زرداری سے جیسے سرپرست ہوں اُس ملک میں ان شخصیات سے خیر کی توقع رکھنا ناممکن ہے، انہوں نے کہا کہ حکومت اور اپوزیشن کے گٹھ جوڑ کی وجہ سے فی الحال کسی تبدیلی کے متعلق سوچا بھی نہیں جاسکتا۔ تبدیلی انقلاب کے بغیر ممکن نہیں ہے، جہاں کے عوام لسانیت اور فرقہ وارایت میں تبدیل کردیے گئے ہوں، وہاں کوئی عوامی تحریک نہیں چل سکتی ہے، اس لئے جمہوری طریقے سے تبدیلی ممکن نہیں ہے، حیات شاہ نے اعلان کیا ہے کہ پاکستان جسٹس پارٹی اگست سے کرپشن کیخلاف اور فوجی عدالتوں کی بحالی کیلئے مظاہرے شروع کرے گی۔ انہوں نے کارکنوں سے کہا کہ وہ انقلاب کی تحریک کے لیے خود کو ذہنی طور پر تیار کرلیں، اور ہر قسم کے حالات کا سامنا کرنے کیلئے تیار رہیں۔