کے الیکٹرک عملہ جعلی میٹر ریڈنگ سے کروڑوں روپے بٹورنے لگا

July 30, 2015 4:27 pm0 commentsViews: 41

میٹر ریڈنگ کی تصویرکو بل پر شائع کرنے کے نیپرا کے حکم پر عمل نہ ہوسکا
حکام کی جانب سے ریونیو بڑھانے کی ہدایت پر عملدرآمد کیاجارہا ہے، ذرائع،حکومت کی مجرمانہ خاموشی
کراچی( نیوز ڈیسک) کے الیکٹرک نے بجلی کے بل پر میٹر ریڈنگ کی تصویر کو شامل اشاعت بنانے سے متعلق نیشنل الیکٹرک پاور اینڈ ریگولیٹری اتھارٹی کے حکم نامے کوتاحال نظر انداز کیا ہوا ہے جس کا فائدہ اٹھاتے ہوئے کے الیکٹرک کا عملہ صارفین کے ساتھ فراڈ کرنے کیلئے ایک بار پھر سر گرم ہوگیا ہے۔ جعلی میٹر ریڈنگ کے ذریعے شہریوں سے کروڑوں روپے بٹورے جا رہے ہیں تاہم اس کے باوجود سندھ اور وفاقی حکومت کے الیکٹرک کے خلاف کسی بھی قسم کی کارروائی کرنے سے گریزاں ہیں۔ تفصیلات کے مطابق نیپرا اتھارٹی نے صارفین کی بوگس بلنگ سے متعلق شکایات اور تحفظات اور شکایات سننے کے بعد کے الیکٹرک حکام کو یہ ہدایت جاری کی تھیں کہ میٹر ریڈنگ لیتے  وقت میٹر کی تصویر کو شامل اشاعت بنایا جائے تا کہ اوور بلنگ کا امکان نہ رہے تاہم 5 ماہ گزرنے کے باوجود کے الیکٹرک نے نیپرا کے حکم پر تاحال عمل در آمد شروع نہیں کیا جس کا فائدہ اٹھاتے ہوئے ملازمین جعلی میٹر ریڈنگ جھوٹی سائیڈ انسپکشن رپورٹ کی بنیاد پر شہریوں سے اضافی کروڑوں روپے وصول کرنے کیلئے سر گرم ہوگئے ہیں اور حکام کی جانب سے ریونیو بڑھانے کی ہدایات پر عملدر آمد شروع کر دیا گیا ہے ذرائع کا کہنا ہے کہ ریونیو کا ہدف پورا نہ کرنے والے ملازمین کو ان کی ملازمت سے فارغ کر دیاجائے گا۔ جبکہ بل پر میٹر ریڈنگ کی اشاعت سے بوگس بل بھیجنا نا ممکن ہوجائے گا۔

Tags: