سکھر بیراج کو کوئی خطرہ نہیں ہے، وزیراعلیٰ سندھ

August 3, 2015 4:47 pm0 commentsViews: 28

بارش کے پانی کا بہائو تیز ہوسکتا ہے، ہم نے 9 لاکھ کیوسک پانی بہانے کی تیاری کرلی ہے، میڈیا سے بات چیت
وزیراعلیٰ نے گڈوبیراج سے سکھر بیراج تک دریائے سندھ کے لیفٹ بینک کا دورہ کیا، حکام بھی ہمراہ تھے
کراچی( اسٹاف رپورٹر) وزیراعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ نے کہا ہے کہ 3 اگست تک7 لاکھ کیوسک پانی آنا ہے‘ لیکن اندازہ یہ ہے کہ کوہ سلیمان پرپیر سے بدھ تک بارش ہونے کی وجہ سے ہوسکتاہے کہ پانی کا بہائو اور تیز ہوجائے اس کے باوجود ہم نے9لاکھ کیوسک پانی کی تیاری کرلی ہے میں نے گڈو سے سکھر بیراج تک دریائے سندھ کے لیفٹ بنک کا دورہ کیا ہے سکھر بیراج کا تفصیلی جائزہ لیا ہے‘ امید ہے کہ پانی بخیر و خوبی سے گزر جائے گا وہ اتوار کو سکھر بیراج کے دورے کے بعد سیکریٹری آبپاشی سے سیلابی صورتحال پر بریفنگ لینے کے بعد ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کررہے تھے‘ اس موقع پر اپوزیشن لیڈر سید خورشید احمد شاہ اور وزیراعلیٰ سندھ کے معاون خاص علی حسن ہنگوروبھی موجود تھے‘ وزیراعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ نے کہا کہ سکھر بیراج کو اس وقت کوئی خطرہ نہیں ہے کیوں کہ2010 ء کے سیلاب میں سکھر بیراج سے12لاکھ پانی گزر چکا ہے سکھر بیراج کی مرمت کیلئے میں نے پہلے بھی بتایا تھا ورلڈ بینک والوں سے بات کی ہے اور اب بھی ان کو کہا ہے اب ورلڈ بینک کی ٹیم اور برطانیہ کے ماہر جنہوں نے یہ بیراج بنایا تھا ادھر آکر سکھر بیراج کا معائنہ کریں گے اور پھر رپورٹ بنا کر دیں گے پھر کام شروع ہوگا‘ وزیراعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ نے کہا کہ ہمارے ماہر آبپاشی بتاتے ہیں کہ مرمتی کام مکمل ہونے کے بعد یہ بیراج 25 سال مزید کام کریگا اس وقت پانی کے دبائو کی وجہ سے سکھر بیراج کا کوئی خطرہ نہیں ہے۔

Tags: