الطاف حسین نے بھارت اور نیٹو سے مداخلت کا مطالبہ کردیا

August 3, 2015 4:49 pm0 commentsViews: 24

دنیا میں تیزی سے تبدیلیاں آرہی ہیں‘ گریٹر بلوچستان بھی بنے گا‘ گریٹر پختونستان بھی بنے گا اور گریٹر پنجاب بھی ہوگا
ملک بھر کے غریب پنجابی‘ بلوچ‘ سندھی‘ پختون‘ کشمیری‘ سرائیکی‘ ہزارہ وال ہمارے بھائی ہیں‘ ایم کیو ایم امریکہ کے کنونشن سے ٹیلی فونک خطاب
لندن( مانیٹرنگ ڈیسک) متحدہ قومی موومنٹ کے قائد الطاف حسین نے نیٹو فورسز کو کراچی بھیجنے کا مطالبہ کردیا ہے۔ امریکہ کے شہر ڈیلاس میں ایم کیو ایم امریکہ کے تین روزہ سالانہ کنونشن کے موقع پر ایک بڑے اجتماع سے ٹیلی فونک خطاب کرتے ہوئے الطاف حسین نے کہا کہ بھارت ڈر پوک ہے ورنہ پاکستان کی سرزمین پر مہاجروں کا خون نہ بہتا‘ دنیا میں تیزی سے تبدیلیاں آرہی ہیں‘ گریٹر بلوچستان بنے گا‘ گریٹر پنجاب بھی ہوگا اسی لئے اسٹیبلشمنٹ کے متعصب لوگوں نے فیصلہ کرلیا ہے کہ اپنے حقوق کی بات کرنے والے کرایی کے مہاجر نوجوانوں کو مارو اور جو باقی بچیں ان سے غلامی کرائو‘ انہوں نے ایم کیو ایم امریکہ کے کارکنوں سے کہا کہ آپ اقوام متحدہ اور نیٹو کے ہیڈ کوارٹرجائیں‘ وہاں جا کر انہیں مہاجروں پر ڈھائے جانیوالے مظالم سے آگاہ کریں اورکہیں کہ وہ کراچی میں اقوام متحدہ یا نیٹو کی فوج بھیجیں تاکہ وہ معلوم کریں کہ کس نے قتل عام کیا اور کون کون اسکا ذمہ دار تھا‘ جب پاکستان سمیت دنیا بھر میں کارکنان گرین سگنل دیں گے تو ہم پھر باقاعدہ مطالبہ کریں گے کہ مہاجروں کیلئے الگ صوبہ بنایا جائے اور ہمیں ہمارا حق دیا جائے‘ میں سچی اور کھری باتیں کرتا ہوں مجھ پر غداری کے مقدمات بنائے جاتے ہیں مگر مجھے ان مقدمات کی کوئی پرواہ نہیں‘ انہوں نے کہا کہ ہم کسی کیخلاف نہیں ہیں‘ ملک بھر کے غریب و محروم پنجابی‘ بلوچ‘ سندھی‘ پختون‘ کشمیری‘ سرائیکی‘ ہزارہ وال و دیگر قومیتوں کے لوگ ہمارے بھائی تھے‘ اور بھائی رہیں گے‘ امریکہ میںمقیم مہاجر اگر چاہیں تو پاکستان میں مہاجروں پر ڈھائے جانیوالے مظالم کیخلاف نہ صرف متعلقہ اداروں میں انفرادی پٹیشن ارسال کرسکتے ہیں بلکہ اقوام متحدہ اور وائٹ ہائوس کے سامنے لاکھوں افراد کا مظاہرہ کرکے پوری دنیا کو مہاجروں کیخلاف مظالم سے آگاہ کرسکتے ہیں۔ پاکستان میںمذہبی انتہا پسندی کو فروغ دیا جارہاہے‘ پہلے القاعدہ‘ طالبان‘ لشکر جھنگوی‘ لشکرطیبہ اور دیگر جہادی تنظیمیں پوری دنیا میں بنتی رہیں لیکن اب داعش تمام تنظیموں کو ٹیک اوور کررہی ہے اور پوری دنیا میں اپنی مرضی کا مسلک نافذ کرنا چاہتی ہے۔

Tags: