حکومتی اعلان نے تدریسی دورانیہ141 دن تک محدود کر دیا

August 3, 2015 5:19 pm0 commentsViews: 26

سال کے365 دن میں214 دن پڑھائی نہیں ہوتی، موسم گرما کی چھٹیاں کم کی جائیں، چیئرمین فروغ تعلیم مشن
کراچی ( پ ر) موسم گرما کی تعطیلات میں اضافے کے حکومتی فیصلے کے بعد تدریسی دورانیہ141 دن رہ گیا ہے۔ سال کے365 میںسے214 دن پڑھائی نہیں ہوتی۔ دنوں میں کمی کے باعث طلبہ کے لئے تعلیمی کارکردگی کو بہتر بنانا مزید مشکل ہوجائے گا۔ انگریزی میڈیم ہونے کے باعث عام طلبہ کے لئے پڑھائی پہلے ہی بوجھ بن کر رہ گئی ہے۔ جبکہ اب چھٹیاں بڑھا کر حکومت نے طلباء اور اساتذہ کے لئے مزید مشکلات کھڑی کر دی ہیں۔ حکومت اپنے فیصلے پر نظر ثانی کرے۔ ان خیالات کا اظہار ماسٹر دائود کی قیادت میں اساتذہ کے ایک7 رکنی وفد نے لو فروغِ تعلیم مشن کے چیئر مین سے ان کے دفتر میں ملاقات کے دوران بات چیت کرتے ہوئے کیا۔ مشن کے چیئر مین وحید قمر نے کہا کہ 12 میں سے 7 مہینے پڑھائی نہیں ہوتی۔ جس میں سے104 دن ہفتہ اور اتوار ، 46 موسم گرما، 10 موسم سرما، تین عاشورہ، 8 دن عیدوں، ششماہی اور سالانہ امتحانات کی8,8 اور نئے تعلیمی سال کے شروع ہونے سے قبل20 دن اور سالانہ مختص چھٹیوں کی تعداد سات کو ملا کر سندھ کے تعلیمی اداروں میں214 دن پڑھائی معطل رہتی ہے۔ جبکہ باقی پانچ ماہ کے دوران بھی طلبہ ہڑتالوں، خاندانی تقریبات یا بیماری کے باعث کئی دن غیر روایتی چھٹیاں کرنے پر مجبور ہوتے ہیں۔ تعلیمی معیار کو بہتر بنانے کے لئے سب سے پہلے چھٹیوں کی تعداد میں کمی کرنا ہوگی۔ تعلیمی ادارے بندکرکے ہم اپنی نئی نسل کو بہتر نہیں بلکہ بد تر مستقبل کا تحفہ دے رہے ہیں۔

Tags: