آج صبح شفقت حسین کو سینٹرل جیل میں تختہ دار پر لٹکا دیا گیا

August 4, 2015 4:16 pm0 commentsViews: 20

مجرم نے 14 سال قبل 7 سالہ بچے کو اغواء کرنے کے بعد زیادتی کا نشانہ بناکر قتل کردیا تھا
عدالت نے جرم ثابت ہونے پر سزائے موت سنائی تھی‘ صدر مملکت نے مجرم کی رحم کی اپیل مسترد کردی تھی
کراچی( کرائم رپورٹر) صبح سویرے سینٹرل جیل میں شفقت حسین کو پھانسی دے دی گئی‘ مجرم نے سات سالہ بچے کو اغواء کرکے زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد قتل کیا تھا‘ مجرم کے پانچ بار ڈیتھ وارنٹ جاری ہوچکے ہیں‘ تفصیلات کے مطابق آج صبح سینٹرل جیل میں مجرم شفقت حسین کو پھانسی دے دی گئی‘ جس کے بعد لاش کو ایدھی ایمبولینس کے ذریعے اسپتال پہنچایا گیا‘ اس موقع پر شفقت حسین کے بھائی موجود تھے‘ ملزم شفقت حسین نے 14 سال قبل ایک بچے کو اغواء کرلیا تھا اور اسے زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد قتل کردیا تھا‘ جس پر عدالت نے جرم ثابت ہونے پر سزائے موت کی سزا سنائی تھی اور بالآخر 14 سال بعد بچے کے اہل خانہ کو انصاف مل گیا‘ شفقت حسین کا پہلا ڈیتھ وارنٹ جنوری2015‘ دوسرا19 مارچ‘ تیسرا 6 مئی‘ چوتھا 9جون اور پانچواں4 اگست کو نکالا گیا تھا‘ لیکن ہر بار ڈیتھ وارنٹ روک دیا جاتا تھا آج صبح شفقت حسین کو تختہ دار پر لٹکادیا گیا۔شفقت حسین کی صدر پاکستان ممنون حسین سے رحم کی اپیل بھی مسترد کردی گئی تھی۔

Tags: