کراچی کے ضلع وسطی اور غربی میں پانی کے بدترین بحران کا خدشہ

August 4, 2015 4:20 pm0 commentsViews: 26

حب ڈیم سے کراچی کو فراہم کیے جانے والے پانی کے کوٹے میں25 فیصد کمی آگئی، ایم ڈی واٹر بورڈ کا اظہار تشویش
کراچی(اسٹاف رپورٹر) حب ڈیم سے کراچی کو فراہم کیے جانے والے پانی کے کوٹے میں 25 فیصد کمی سے ضلع وسطی و غربی میں بدترین بحران جنم لینے کے خدشات پیدا ہوگئے ہیں جس کا نوٹس لیتے ہوئے ایم ڈی واٹر بورڈ ہاشم رضا زیدی نے اس پر تشویش کااظہار کیا ہے اور واپڈا حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ کراچی کو مقررہ کوٹہ کے مطابق 100 ملین گیلن پانی فراہم کیا جائے تاکہ حب ڈیم کے نظام سے منسلک آبادیوں کو ان کی ضرورت کے مطابق پانی فراہم کیا جاسکے، انہوں نے کہا کہ واپڈا کے حکام نے بغیر کسی پیشگی اطلاع کے 20 سے 25 فیصد پانی کے کوٹے میں کمی کردی ہے جس کی وجہ سے حب ڈیم سے منسلک جنوبی اور شمالی علاقوں، ماڑی پوری، شیرشاہ، سرجانی، سائٹ کا صنعتی علاقہ اور پاکستان ایئرفورس، پاکستان نیوی اور کینوپ جیسے قومی سلامتی کے اداروں میں پانی کی قلت پیدا ہورہی ہے جبکہ ملحقہ گوٹھوں اور جزائر میں رہائش پذیر ہزاروںافراد بھی پانی کی قلت کا شکار ہیں۔ لہٰذا وپڈا حکام سے پرزور مطالبہ کیاجاتا ہے کہ کراچی کو اس کے مقررہ کوٹے کے مطابق 100 ملین گیلن پانی کی فراہمی فوری طور پر بحال کی جائے۔

Tags: