تحریک انصاف کے دھرنے میں2 سابق جرنیلوں کا ہاتھ تھا، خواجہ آصف

August 4, 2015 4:38 pm0 commentsViews: 19

شجاع پاشا نے آن ڈیوٹی ہوتے ہوئے بھی سیاسی عزائم پر کام کیا
ضرورت محسوس ہوئی تو ثبوت بھی دیں گے، وقت ان سے حساب لے گا، وزیر دفاع
اسلام آباد( مانیٹرنگ ڈیسک) وفاقی حکومت نے متحدہ رہنمائوں کو متنبہ کیا ہے کہ اگر انہوں نے لندن میں مقیم اپنے قائد کے غداری پر مبنی بیانات کی حمایت بند نہ کی تو ان کے خلاف قانونی کارروائی کا آغاز کر دیا جائے گا۔ اس میں الطاف حیسن کے ایسے بیانات کی حمایت کرنے والوں کے خلاف مقدمات درج کرکے ان کی گرفتاری اور ارکان پارلیمنٹ کی نا اہلی کے لئے ریفرنسز شامل ہو سکتے ہیں۔ خواجہ آصف نے کہا کہ رابطہ کمیٹی نے الطاف حسین کے بیان کو رد نہ کیا تو وہ بھی شریک جرم سمجھی جائے گی۔ ذرائع کے مطابق سیکورٹی اداروں اور وفاقی حکومت نے برطانیہ میں خود ساختہ جلا وطن متحدہ قومی موومنٹ کے قائد الطاف حسین کے ملک دشمنی پر مبنی بیانات کا سختی سے نوٹس لیا ہے، اس حوالے سے پیر کو وزیر اعظم اور آرمی چیف کی ملاقات کو بھی اہمیت دی جا رہی ہے۔ ذرائع کے مطابق حکومت نے ایک طرف الطاف حسین کے خلاف کارروائی کیلئے برطانیہ سے رابطے بڑھانے کا فیصلہ کیا ہے۔ دوسری جانب ملک میں موجود متحدہ رہنمائوں کی جانب سے اپنے قائد کے غداری پر مبنی بیانات کی حمایت کا بھی سختی سے نوٹس لے لیا ہے۔ اس حوالے سے قانونی کارروائی کے آغاز کے لئے مشاورت شروع کر دی گئی ہے۔

Tags: