بین الاقوامی بھتہ خور گروپ کے 4 کارندے گرفتار

August 4, 2015 5:21 pm0 commentsViews: 33

سی پی ایل سی اور اجمیر نگری پولیس نے مشترکہ آپریشن کیا گرفتار ملزمان کے قبضے سے اسلحہ، کمپیوٹر،موبائل فون اور دوسرا سامان برآمد
ملزمان بذریعہ ای میل ڈاکٹرز اور ادویات کمپنیوں کو دھمکی آمیز خطوط بھیجتے تھے‘ بھتے کی رقم افریقہ بھیجی جاتی تھی
کراچی (کرائم رپورٹر) خواجہ اجمیر نگری پولیس اور سی پی ایل سی نے مشترکہ کارروائی کرتے ہوئے بین الاقوامی بھتہ خور گروپ کے چار کارندوں کو گرفتار کرکے اسلحہ ،کمپیوٹر ،موبائل فونز اور دیگر سامان برآمد کرلیا ۔بھتہ خور ڈاکٹروں اورتاجروں سے ای میل کے ذریعے بھتہ طلب کرتے تھے،بھتے سے حاصل ہونے والی رقوم جنوبی افریقہ بھیجی جاتی تھیں ، ملزمان طالبان اور لیاری گینگ وار کا نام استعمال کرتے تھے ۔ ڈی آئی جی ویسٹ فیروز شاہ نے اپنے دفتر میں ہونے والی پریس کانفرنس کے دوران صحافیوں سے بات کرتے ہوئے بتایاکہ سی پی ایل سی کی ٹیم نے اجمیر نگری پولیس کے ہمراہ کارروائی کرتے ہوئے تین ملزموںرفیق ،واصف اور فیضان عرف ماٹھو کو گرفتار کر کے انکے قبضے سے بھتے کی پرچیاں ، کمپیوٹر اور دیگر سامان برآمد کر کے اپنی تحویل میں لے لیا۔ انہوں نے بتایا کہ ملزما ن کا تعلق بین الاقوامی بھتہ گروپ سے ہے اور ملزمان کو حافظ فرقان اور انکا ایک اور ساتھی بذریعہ ای میل ڈاکٹرز اور ادویات کی کمپنیوں کے لیے دھمکی بھرا خط بھیجتے تھے جسے ملزمان پرنٹ آئونٹ کر کے اسکے ساتھ گولی چسپاں کرتے تھے اور کورئیر کمپنی کے ذریعے دھمکی آمیز خط بھیجا کرتے تھے اور اس کے نتیجے میں حاصل ہونے والی رقوم منی ٹرانسفر ایک افریقنکمپنی ہے اسکے ذریعے افریقہ بھیجی جاتی تھیں ۔انہوں نے بتایا کہ ملزمان نے شہر کے معروف اسپتالوں کے ڈاکٹرز اور ادویات کمپنیوں کے مالکان سے بھتے کی وصولی کا اعتراف کیا ہے اور ملزمان کا تعلق ایک سیاسی تنظیم سے ہے او روہ واردات کے لیے کالعدم تحریک طالبان پاکستان اور لیاری گینگ وار کا نام استعمال کرتے تھے انہوں نے بتایا کہ ملزموں کی نشاندہی پر جوہر آبا د سے ایک ملزم طفیل کو گرفتار کیا گیا اور اسکے قبضے سے بھی کمپیوٹرز تحویل میں لے لیے گئے ہیں ملزموں نے شہر کے مختلف علاقوں میں ڈاکٹرز کی کلینک پر فائرنگ کر نے اور ان پر حملوں کا بھی اعتراف کیا ہے ۔