کرکٹر وسیم اکرم پر فائرنگ،معجزانہ طور پر بچ گئے

August 6, 2015 4:56 pm0 commentsViews: 46

اپنی مرسڈیز کار میں کار ساز روڈ پر جا رہے تھے، ہنڈا کار میں سوار شخص نے گاڑی کو ٹکر مار دی
50 سالہ نامعلوم شخص اور اس کے گارڈ نے تلخ کلامی کے بعد گولی چلا دی جو گاڑی کے ٹائر پر لگی
پولیس نے فائرنگ کرنے والے ملزم کی کار برآمد کر لی، ملزم اپنے محافظوں سمیت فرار ہو گیا
کراچی( کرائم ڈیسک) پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق اور عالمی شہرت یافتہ فاسٹ بولر وسیم اکرم پر ٹریفک حادثے کے بعد کار سوار شخص نے فائرنگ کر دی لیکن وہ معجزانہ طور بچ گئے۔ پولیس نے فائرنگ کرنے والے ملزم کی کار بر آمد کر لی تاہم ملزم اپنے محافظوں سمیت فرار ہوگیا۔ تفصیلات کے مطابق بدھ کو عالمی شہرت یافتہ کرکٹر وسیم اکرم بہادر آباد کے علاقے کار ساز روڈ پر مرسڈیز کار میں جا رہے تھے۔ اس دوران ایک ہنڈا سوک کارنمبرAEG.061 نے ان کی کار کو ٹکر مار دی جس پر وسیم اکرم نے گاڑی سے اتر کر ٹکر مارنے والے شخص سے بات کرنے کی کوشش کی تاہم دوسری کار میں موجود50 سالہ نا معلوم شخص اور اس کے گارڈز کار سے باہر نکلے اور تلخ کلامی کے بعد ان کی جانب سے ایک گولی چلائی گئی جو کہ وسیم اکرم کی گاڑی کے ٹائر پر لگی اور ٹائر پھٹ گیا۔ اسی دوران کار میں موجود ایک شخص نے وسیم کرم کو پہچانتے ہوئے دوسرے شخص کو مخاطب کیا اور دونوں افراد فرار ہوگئے۔ واقعے کے بعد وسیم اکرم نے اس کی اطلاع15 پر دی جس پر پولیس کی بھاری نفری موقع پر پہنچی، ایس ایس پی ایسٹ جاوید جسکانی نے بتایا کہ وسیم اکرم اپنی کار میں اکیلے نیشنل کرکٹ اسٹیڈیم میں بائولنگ کیمپ جا رہے تھے۔ یہ کوئی پلانٹڈ حملہ نہیں تھا۔ اتفاقی حادثے کے بعد واقعہ پیش آیا ہے۔

Tags: