اسٹیل ملز ملازمین کی ملک گیر احتجاج اور ریلوے ٹریک بند کرنے کی دھمکی

August 6, 2015 4:48 pm0 commentsViews: 35

پاکستان اسٹیل کی بحالی کیلئے ریلیف پیکیج کا اعلان اور گیس پریشر بحال نہ کیا گیا تو ادارے کی خراب کارکردگی کی ذمہ دار وفاقی حکومت ہوگی
ادارے کی نجکاری کا عمل بند کرایا جائے‘ اسٹیل مل ورکز یونین سی بی اے کے عہدے داروں کا پریس کانفرنس سے خطاب
کراچی( اسٹاف رپورٹر) پاکستان اسٹیل پیپلز ورکرز یونین ( سی بی اے) کے چیئر مین شمشاد قریشی نے وزیر اعظم نواز شریف اور وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار سے مطالبہ کیا ہے کہ پاکستان اسٹیل کی بحالی کے لئے قرضوں کے بجائے ریلیف پیکج کا اعلان کیا جائے۔ اسٹیل مل کے اہم مسائل کی طرف فوری اور خصوصی توجہ دی جائے۔ وزیر پیٹرولیم شاہد خاقان عباسی اور سوئی سدرن گیس کمپنی کے سربراہ مفتاح اسماعیل کے خلاف ایکشن لیتے ہوئے پاکستان اسٹیل کا گیس پریشر بحال کرایا جائے۔ بصورت دیگر پاکستان اسٹیل کی پیداواری کارکردگی خراب کرنے کی ذمہ دار وفاقی حکومت ہوگی انہوں نے یہ مطالبہ بھی کیا کہ جون اور جولائی کی تنخواہیں فوری ادا کی جائیں۔ ریٹائرڈ ملازمین اور وفات پا جانے والے ملازمین کے واجبات ادا کئے جائیں۔ ادارے کی نجکاری کا عمل بند کیا جائے۔ بصورت دیگر ملک کے تمام محنت کش مل کر ملک گیر احتجاجی تحریک چلانے پر مجبور ہوجائیں گے۔ اور ریلوے ٹریک کو بھی بند کر دیا جائے گا۔ یہ مطالبات شمشاد قریشی نے بدھ کو کراچی پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کئے۔ اس موقع پر سی بی اے کے صدر دھنی بخش سموں، جنرل سیکریٹری سید حمید اللہ، سیکریٹری اطلاعات، مرزا طارق جاوید و دیگر عہدیدار بھی موجود تھے۔

Tags: