بلدیہ عظمیٰ او رواٹربورڈ میں تنازعہ شدت اختیار کر گیا

August 6, 2015 5:17 pm0 commentsViews: 17

کمشنر کراچی کی بڑھتی ہوئی مداخلت کی وجہ سے دونوں اداروں میں دوریاں بڑھ رہی ہیں
شعیب صدیقی نے واٹربورڈ سمیت کسی بھی ادارے کی جانب سے بغیر اجازت سڑک کاٹنے پر ایف آئی آر کٹوانے کی ہدایت کردی
کراچی (سٹی رپورٹر) کمشنر کراچی کی واٹر بورڈ کے معاملات میں بڑھتی مداخلت کے باعث بلدیہ عظمیٰ کراچی اور کراچی واٹر اینڈ سیوریج بورڈ کے درمیان تنازع شدت اختیار کر گیاایڈمنسٹریٹر کراچی شعیب احمد صدیقی نے واٹر بورڈ سمیت کسی بھی ادارہ کی طرف سے بغیر اجازت سڑک کاٹنے پر ایف آئی آر درج کرانے کی ہدایت جاری کردیں جبکہ پانی و سیوریج کی لائنوں کی مرمت کے بغیر سڑکوں کی تعمیر پر پابندی لگانے کے ساتھ ساتھ آئندہ ہر قسم کی سڑک کی تعمیر سے قبل پانی و سیوریج کی لائنوں کی مرمت لازمی کرائی جائے ، ان خیالات اظہار انہوں نے سڑکوں کی پیوند کاری، استر کاری اور نئی سڑکوں کے تعمیراتی کاموں کے آغاز کے حوالے سے منعقدہ ایک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ ایڈمنسٹریٹر کراچی نے کہا کہ پانی وسیوریج کی لائنوں کی مرمت و تبدیلی کے بغیر سڑکوں کی تعمیروسائل کا ضیاع ہے ایسی سڑکیں فوراً ٹوٹ جاتی ہیں اس لئے آئندہ سڑکوں کی تعمیر سے قبل پانی وسیوریج کی لائنوں کو تبدیل کئے بغیر کسی بھی سڑک پر تعمیراتی کام شروع نہیں کیا جائے گا جبکہ لانگ لائف روڈ کی تعمیر کے وقت دیگر یوٹیلیٹی سروسز کیلئے بھی سہولت رکھی جائے تاکہ آئندہ اس سڑک کو کاٹنے کی ضرورت نہ پڑے، انہوں نے کہا کہ آئندہ واٹر بورڈ سمیت کوئی بھی ادارہ بغیر اجازت سڑک کاٹے تو اس کے خلاف ایف آئی آر درج کرائی جائے۔

Tags: