کارکنوں کی بازیابی کیلئے متحدہ کے بھارت سمیت55 ممالک کو خطوط، معمول کی کارروائی ہے، ترجمان

August 7, 2015 4:49 pm0 commentsViews: 22

پاکستان ایجنسیوں نے متحدہ کے12 کارکنوں کو اغوا کرکے4 کو لاپتہ کر دیا، بھارت عالمی برادری میں آواز بلند کرے، خط میں مطالبہ
بھارت کو خط غلطی سے چلا گیا ہوگا، فاروق ستار،55 ممالک کو خط لکھے، صرف بھارت کا خط سامنے لانا بدنیتی ہے، شبیر قائم خانی
کراچی، اسلام آباد( نیوز ڈیسک) متحدہ قومی موومنٹ کے کارکنوں کی پاکستان میں گرفتاری کے حوالے سے بھارتی ہائی کمیشن کو خط لکھ کر گرفتار افراد کی رہائی کے لئے آواز اٹھانے کی درخواست کی ہے۔ ایم کیو ایم کے رہنما عارف ایڈووکیٹ، شبیر قائم خانی اور اقبال خانزادہ کی جانب سے بھارتی ہائی کمشنر سی اے راگھوان کو لکھے گئے خط میں کہا گیاہے کہ پاکستان کی سرکاری ایجنسیوں کے اہلکاروں نے گزشتہ دنوں کراچی سے حیدر آباد آنے والے 12 ہمدرد اور کارکنوں کو گرفتار کیا جن میں سے8 ہمدردوں کو رہا کر دیا گیا ہے جبکہ4 کارکن تاحال لا پتہ یا ایجنسیوں کی حراست میں ہیں۔ ان چاروں کی جان کو شدید خطرات لاحق ہیں اس لئے بھارت، پاکستان میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کا نوٹس لیتے ہوئے عالمی برادری میں آواز بلند کرے۔ ذرائع کے مطابق ایم کیو ایم کی جانب سے بھارتی ہائی کمیشن کو خط 30 جولائی کو لکھا گیا جس میں متحدہ کے 3 رہنمائوں کے دستخط موجود ہیں جبکہ اس حوالے سے پاکستانی حکام کو آگاہ نہیں کیا گیا۔ ایم کیو ایم کے رہنما وسیم اختر نے کہا کہ غیر ملکی سفارتخانوں کو خطوط لکھنا معمول کی بات ہے، ایم کیو ایم نے55سے زائد ممالک کو خطوط لکھے۔ وسیم اختر نے کہا کہ وزیر اعظم نواز شریف آم کی پیٹیاں بھارت بھجوا سکتے ہیں، نریندر مودی سے بار بار مل سکتے ہیں، نواز شریف بھارت میں کاروبار بھی کرتے ہیں ہم نے خط لکھ دیا تو کیا ہوگیا۔ علاوہ ازیں ترجمان ایم کیو ایم کے مطابق ایم کیو ایم کوئی کام چھپ کر نہیں کرتی، اقوام متحدہ، یورپی یونین اور ایمنسٹی انٹر نیشنل کو خطوط ارسال کئے ہیں۔ دنیا بھر کے مختلف ممالک کے سفارتخانوں کو خط لکھنا معمول کی کارروائی ہے۔ ذرائع کے مطابق قومی اسمبلی کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے فاروق ستار نے کہا کہ بھارت کو خط تکنیکی غلطی ہو سکتی ہے۔ دانستہ غلطی نہیں، سفارتخانوں کے ایڈریس میں بھارت کا ای میل بھی ہوگا لہٰذا غلطی سے خط بھارتی ہائی کمیشن کو چلا گیا ہوگا۔ علاوہ ازیں متحدہ رہنما شبیر قائم خانی نے کہا کہ ایم کیو ایم کی جانب سے امریکا، برطانیہ، چین، جاپان، آسٹریلیا اور عرب ریاستوں سمیت دنیا کے55 ممالک کو خطوط لکھے گئے صرف بھارت کو لکھا گیا خط سامنے لانا بد نیتی پر مبنی اقدام ہے۔

Tags: