ناراض بلوچوں کو منانے کیلئے ’’پرامن بلوچستان‘‘ پروگرام کا اعلان

August 7, 2015 4:51 pm0 commentsViews: 29

دہشت گردی کے خاتمے تک آپریشن جاری رہے گا،ہتھیار ڈالنے والوں کو مراعات اور 15لاکھ تک دینے کا فیصلہ
کوئٹہ( مانیٹرنگ ڈیسک/ خبر ایجنسیاں) وزیر اعظم نواز شریف نے ناراض بلوچوں کو مرکزی دھارے میں واپس لانے کے لئے پر امن بلوچستان پروگرام کی منظوری دیتے ہوئے کہا ہے کہ بلوچستان کی ترقی اور خوشحالی کے لئے امن و استحکام انتہائی ضروری ہے۔ بلوچستان کے حالات ماضی کی نسبت بہت ہیں۔ دلی خواہش ہے ناراض بلوچ رہنما قومی دھارے میں شامل ہو کر ملک کی تعمیر و ترقی میں اپنا کر دار ادا کریں، آپریشن ضرب عضب کے شاندار نتائج سامنے آئے ہیں، ملک سے آخری دہشت گردی کے خاتمے تک آپریشن جاری رہے گا، ہتھیار ڈالنے والوں کو مختلف مراعات کے ساتھ 5 سے15 لاکھ روپے دئیے جائیں گے۔ جمعرات کے روز وزیر اعظم نواز شریف کی زیر صدارت میں بلوچستان ایپکس کمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں بلوچستان کی مجموعی صورتحال، صوبے میں جاری سوزش اور نیشنل ایکشن پلان میں پیش رفت کا جائزہ لیا گیا۔ اجلاس میں ناراض بلوچ رہنمائوں سے ہونے والی بات چیت اور پر امن بلوچستان پیکج کے بارے میں تفصیلی بریفنگ دی گئی۔ اجلاس میں آرمی چیف جنرل راحیل شریف ، وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان، وزیر برائے سیفران لیفٹیننٹ جنرل( ر) عبدالقادر بلوچ، گورنر بلوچستان محمد خان اچکزئی اور وزیر اعلیٰ بلوچستان ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ بھی شریک تھے۔ وزیر اعظم نواز شریف نے صوبے کی مجموعی صورتحال پر اطمینان کا اظہار کیا اور پر امن بلوچستان پروگرام کی بھی منظوری دے دی۔

Tags: