بحیرہ روم میں تارکین وطن کی کشتی ڈوب گئی،100افراد ہلاک

August 7, 2015 6:05 pm0 commentsViews: 23

کشتی میں600افراد سوار تھے جن میں400کو بچالیا گیا، 25 لاشیں نکالی جاچکی ہیں
تریپولی( مانیٹرنگ ڈیسک) بحیرہ روم میں تارکین وطن کی کشتی الٹنے سے100 سے زائد افراد ہلاک ہوگئے ہیں‘ لیبیا سے چلنے والی اس کشتی میں تقریباً600 افراد سوار تھے‘ جن میں سے400 کو بچالیا گیا ہے‘ اب تک25 افراد کی لاشیں بحیرہ روم سے نکالی جا چکی ہیں‘ حکام کا کہنا ہے کہ سینکڑوں افراد کے سمندر میں ڈوبنے کا خطرہ ہے جبکہ اقوام متحدہ کے ادارے برائے پناہ گزین کا کہنا ہے کہ400 افراد کو بچالیا گیا ہے۔ اٹلی کے کوسٹ گارڈ کے مطابق ابھی تک سمندر سے 25 افراد کی لاشیں ملی ہیں لیکن لاپتہ افراد کی تعداد واضح نہیں ہے۔ 2015 میں بحیرہ روم کے راستے غیر قانونی طور پر یورپ پہنچنے کی کوشش میں اب تک2 ہزار سے زائد افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔ امدادی کارروائیوں میں تین ہیلی کاپٹر اور 7 جہاز حصہ لے رہے ہیں۔ اٹلی کے کوسٹ گارڈ حکام کا کہنا ہے کہ رات دیر گئے تک امدادی آپریشن جاری رہا اور زندہ بچ جانیوالے افراد نے بتایا کہ کشتی پر 400 سے600 کے درمیان افراد سوار تھے۔

Tags: