دریائے سندھ میں طغیانی، ایس ایم بند ٹوٹنے کا خطرہ، مکینوں کی نقل مکانی

August 7, 2015 6:06 pm0 commentsViews: 35

قریبی دیہات میں شدید خوف و ہراس پھیل گیا، بند کو فوری طور پر پاک فوج کے حوالے کرنے کا مطالبہ، سجاول میں بھی پانی کا بہائو بڑھ گیا
سگھیوں کے کچے کے علاقے میں ہزاروں افراد تاحال پانی میں پھنسے ہوئے ہیں، علامہ مکینوں کا محکمہ آبپاشی اور ریونیو کے افسران کیخلاف مظاہرہ
ہنگورجہ‘ لاڑکانہ‘ سجاول( نیوز ایجنسیاں) دریائے سندھ میں گڈو بیراج کے مقام پر انتہائی اونچے درجے کا سیلاب‘ پانی کے بہائو میں اضافے نے خطرناک صورتحال اختیار کرلی‘ ایس ایم بچائو بند‘ منگلی بند ٹوٹنے کا خدشہ پیدا ہوگیا‘ قریبی علاقوں میں سینکڑوں افراد نے نقل مکانی شروع کردی‘ سکھر بیراج کے مقام پر سیلاب کا خطرہ ٹل گیا‘ تفصیلات کے مطابق دریائے سندھ میں طغیانی کی وجہ سے سگھیوں کے قریب ایس ایم بچائو بند ٹوٹنے کا خطرہ پیدا ہوگیا ہے جس کی وجہ سے علاقہ مکینوں میں سخت خوف و ہراس پھیل گیا‘ سینکڑوں افراد اپنے مکان خالی کرگئے‘ دوسری جانب سگھیوں کے کچے کے علاقے میں ہزاروں افراد ابھی تک پانی میں پھنسے ہوئے ہیں ان کو نکالنے کیلئے انتظامیہ نے ابھی تک کوئی اقدام نہیں اٹھایا‘ علاقہ مکینوں نے محکمہ آبپاشی ریونیو کے افسران کیخلاف احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ فوری طور پر کچے میں پھنسے ہوئے لوگوں کو باہر نکالا جائے‘ ادھر لاڑکانہ میں منگلی بند پر سیلابی پانی کے شدید دبائو نے کٹائو کی صورتحال پیدا کردی ہے جس سے بند کمزور ہونے کے باعث خطرناک صورتحال پیدا ہوگئی ‘بند کے قریب واقع دیہات میں شدید خوف و ہراس پھیل چکا ہے‘ عوام نے مطالبہ کیا کہ بند کو فوری طور پر پاک فوج کے حوالے کیا جائے سجاول کے کچے میں پانی کے بہائو میں اضافہ ہورہا ہے۔

Tags: