سندھ اسمبلی میں متحدہ اور پی پی ارکان میں دھکم پیل اور ہنگامہ آرائی

August 11, 2015 7:49 pm0 commentsViews: 41

ایم کیو ایم کے ارکان اپنے کارکن کے قتل کے حوالے سے بات کرنے کی اجازت نہ ملنے پر وزیر اعلیٰ کی جانب بڑھنے لگے تو پیپلز پارٹی کے ارکان نے روک لیا
محمد ہاشم کے قاتل گرفتار نہ ہوئے تو اس کی ذمہ داری آپریشن کے کپتان پر ہوگی‘ ایم کیو ایم‘ اسپیکر نے اجلاس آج تک کے لئے ملتوی کردیا
کراچی(اسٹاف رپورٹر)سندھ اسمبلی میں پیر کو ایم کیو ایم کے ارکان نے زبردست احتجاج اور ہنگامہ کیا اور نعرے بازی کی ۔اسپیکر کو ایک مرتبہ اجلاس دس منٹ کے لیے ملتوی کرنا پڑا ۔جبکہ دوسری مرتبہ اجلاس منگل کی صبح تک ملتوی کردیا گیا ۔ایم کیو ایم نے پہلے اپنے کارکن محمد ہاشم کے قتل پر بات کرنے کی اجازت نہ ملنے پر احتجا ج کیا جبکہ دوسری مرتبہ آصف علی زرداری اور عمران خان کے خلاف قرارداد پیش کرنے کی اجازت نہ ملنے پر ہنگامہ کیا ۔اسمبلی میں اس وقت صورت حال زبردست کشیدہ ہوگئی ،جب متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) کے ارکان اپنے کارکن محمد ہاشم کے قتل کے حوالے سے بات کرنے کی اجازت نہ ملنے پر احتجاج کرتے ہوئے وزیراعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ کی طرف بڑھے ۔پیپلزپارٹی کے ارکان وزیراعلیٰ سندھ کے اردگرد جمع ہوگئے اور ایم کیو ایم کے ارکان کو روکا ۔پیپلزپارٹی کے رکن ڈاکٹر ستار راجپر نے ایم کیو ایم کے رکن ڈاکٹر ظفر خان کمالی کو دھکا دے کر پیچھے ہٹایا۔ دونوں جماعتوں کے ارکان کے درمیان زبردست دھکم پیل ہوئی ۔ایوان میں کافی دیر تک ہنگامہ اور شور شرابہ ہوا ۔سندھ اسمبلی کا اجلاس شروع ہونے کے بعد فاتحہ خوانی اور دعا کے وقفے کے دوران ایم کیو ایم کے ارکان نے محمد ہاشم کے پراسرار قتل کا معاملہ اٹھایا ۔ڈاکٹر ظفر کمالی نے کہا کہ ایم کیو ایم کے قائد الطاف حسین نے 13اور 14اگست کو جشن آزادی بھرپور طریقے سے منانے کا اعلان کیا ہے ۔ایم کیو ایم جس طرح جشن منائے گی ،وہ دنیا دیکھے گی ۔ہاشم بھائی کے قاتلوں کو گرفتار کیا جائے ۔انہوں نے کہا کہ خدا ان لوگوں کو نیست و نابود کرے جنہوں نے پاکستان کو توڑا اور ’’ادھر تم ادھر ہم‘‘ کا نعرہ لگایا ۔اس پر پیپلزپارٹی کے ارکان نے کھڑے ہو کر احتجاج کیا ۔اسپیکر نے ظفرکمالی کا مائیک بند کرادیا اورکہا کہ دعا کا مطلب یہ نہیں ہے کہ تقاریر کی جائیں ۔اسپیکر نے ان کے الفاظ ہذف کرادیئے ۔ایم کیو ایم کے راشد خلجی نے کہا کہ جو لوگ ہمارے کارکنوں کو قتل کررہے ہیں اللہ انہیں نیست و نابود کرے ۔محمد ہاشم کے قاتل گرفتار نہیں ہوئے تو اس کی ذمہ داری آپریشن کے کپتان پر عائد ہوگی ۔ایم کیو ایم کے حسیب احمد نے کہا کہ محمد ہاشم سندھ کا بیٹا ہے اور عرف عام میں مہاجر ہے ۔الطاف حسین کی طرف سے جشن آزادی بھرپور طریقے سے منانے کے اعلان کے بعد ہمیں اس لاش کا تحفہ ملا ہے ۔ایم کیو ایم کے ارکان نے بعد ازاں اسپیکر کے ڈائس کے سامنے ہو کر زبردست نعرے بازی کی ۔اسپیکر نے ایم کیو ایم کے ارکان سے کہا کہ وہ اپنی نشستوں پر جاکر بیٹھ جائیں لیکن ایم کیو ایم کے ارکان نے نعرے بازی جاری رکھی ۔شور شرابے کے دوران اسپیکر نے دن کے 12بج کر 33منٹ پر اجلاس 10منٹ کے لئے ملتوی کردیا ۔ایم کیو ایم کے ارکان مسلسل شور کرتے رہے تو اسپیکر نے اجلاس منگل کی صبح تک ملتوی کردیا ۔ایم کیو ایم کے ارکان نے ایوان کے اندر ’’گوزرداری گو،گوعمران گو‘‘ کے زبردست نعرے لگائے۔

Tags: