جھنڈا لگانے پر متحدہ اور مہاجر قومی موومنٹ کے کارکنوں میں تصادم

August 11, 2015 9:33 pm0 commentsViews: 37

آر سی ڈی گرائونڈ میدان جنگ میںتبدیل‘ کارکنوں میں ہاتھا پائی‘ ڈنڈوں کا آزادانہ استعمال شدید فائرنگ کی گئی
پولیس اور رینجرز کی بروقت کارروائی‘ چند کارکنان گرفتار‘ علاقے میں سخت خوف و ہراس‘ کاروبار بند
کراچی( اسٹاف رپورٹر) ملیر کے علاقے میں قومی پرچم لگانے کے دوران مہاجر قومی موومنٹ اور متحدہ قومی موومنٹ کے کارکنوں کے درمیان تصادم کے نتیجے میں مہاجر قومی موومنٹ کے2کارکن زخمی ہوگئے۔ تفصیلات کے مطابق سعود آباد کے علاقے ملیر آر سی ڈی گرائونڈ کے قریب قومی پرچم لگانے کے دوران مہاجر قومی موومنٹ اور متحدہ قومی موومنٹ کے کارکنان کے درمیان ہاتھا پائی اور لاٹھی ڈنڈوں کا آزادانہ استعمال ہوا اس دوران شدید ہوائی فائرنگ سے خوف و ہراس اور کشیدگی پھیل گئی۔ اور بھگدڑ مچ گئی۔ اس دوران فائرنگ کی زد میں آکر مہاجر قومی موومنٹ کے 2 کارکنان شہزاد اعجاز اور محمد فرحان زخمی ہوگئے جن کو جناح اسپتال منتقل کیا گیا۔ ایس ایچ او سعود آباد گہنور مہر کے مطابق ملیر آر سی ڈی گرائونڈ کے قریب حقیقی کے کارکنان یوم آزادی کے سلسلے میں قومی پرچم کھمبے پر لگا رہے تھے کہ متحدہ قومی موومنٹ کے کارکنان موقع پر پہنچ گئے جس کے بعد فریقین میں تلخ کلامی کے بعد ہاتھا پائی شروع ہوگئی، اور نوبت فائرنگ تک جا پہنچی اور گولیاں لگنے سے مہاجر قومی موومنٹ کے2 کارکنان زخمی ہوگئے۔ پولیس اور رینجرز کی بھاری نفری کی مداخلت کے باعث تصادم رک گیا، پولیس نے چند افراد کو حراست میں لے کر تھانے منتقل کردیا۔ واقعے کے بعد علاقے میں کاروبار جزوی طور پر بند ہوگیا۔

Tags: