پی پی اور لیاری گینگ وار کے تعلقات کی ویڈیو منظر عام پر آگئی

August 12, 2015 2:05 pm0 commentsViews: 110

قائم علی شاہ نے وزارت اعلیٰ کا حلف لینے کے بعد عذیر بلوچ کے عشائیہ میں شرکت کی
تقریب میں فریال تالپور، شہلا رضا اور شرمیلا فاروقی اور ثانیہ ناز بھی شریک تھیں
کراچی( نیوز ڈیسک) پاکستان پیپلز پارٹی اور لیاری گینگ وار کے سرغنہ عذیز بلوچ کے تعلقات کتنے قریب تھے اس حوالے سے پہلی بار ایک ویڈیو منظر عام پر آئی ہے جس میں دکھایا گیا ہے کہ وزیر اعلیٰ سندھ قائم علی شاہ وزارت اعلیٰ کا حلف لیتے ہی عذیر بلوچ کی جانب سے دئے گئے عشائیے میں شرکت کے لئے گئے۔ اس تقریب میں فریال تالپور، شہلا رضا، شرمیلا فاروقی بھی شامل تھیں۔ نجی ٹی وی پر ویڈیو میں دکھایا گیا ہے کہ وزیر اعلیٰ نے تقریب میں پہنچتے ہی عذیر بلوچ اور ماضی میں قتل کئے گئے کالعدم لیاری امن کمیٹی کے رہنما ظفر بلوچ سے مصافحہ کیا اور گلے ملے۔ استقبالیہ تقریب سے رکن سندھ اسمبلی ثانیہ ناز نے بھی خطاب کیا اور عذیر بلوچ کی وفا داری کا حلف اٹھاتے ہوئے کہا کہ ہمیشہ عذیر بلوچ کا ساتھ دوں گی۔ یوسف بلوچ نے کہا کہ عذیر بلوچ اور پیپلز پارٹی ملکر کارکنوں کو حقوق دلوائیں گے۔ نجی ٹی وی کے مطابق تقریب سے پہلے مارچ 2013ء میں سندھ حکومت نے عذیر بلوچ کے سر کی قیمت ختم کی تھی جبکہ عشایئے میں شرکت اپریل میں کی گئی۔ عذیر بلوچ نے تقریب میںفریال تالپور کو قرآن مجید کا تحفہ دیا تھا۔ پیپلز پارٹی کے رہنما سعید غنی نے نجی ٹی وی سے گفتگو میں کہا کہ اس وقت تاثر یہ بن گیا تھا کہ پیپلز پارٹی لیاری میں داخل نہیں ہو سکتی۔ ثانیہ ناز کو زیادہ نہیں جانتا انہوں نے حلف لے کر غلط کیا۔ ذوالفقار مرزا نے عذیر بلوچ اور دیگر کو سر چڑھا لیا تھا۔ ایم کیو ایم کے دبائو پر ہی امن کمیٹی پر پابندی لگائی گئی۔

Tags: