شہر میں سینکڑوں غیرقانونی اشتہاری بورڈز اب بھی لگے ہوئے ہیں

August 12, 2015 2:33 pm0 commentsViews: 37

بلدیہ عظمیٰ کا کراچی کے 800 سے زائد اشتہاری بورڈز ہٹانے کا کام جاری، آئی آئی چند ریگر روڈ پر غیرقانونی بورڈ لگے ہوئے ہیں
تحقیقاتی اداروں کے خوف سے کارساز روڈ پر لگے ہوئے ایک درجن سے زائد بورڈ ہٹا دیے گئے
کراچی(سٹی رپورٹر) آئی آئی چندریگر روڈ پرغیر قانونی گینتری سائن تاحال اتارے نہ جاسکے،بغیر ٹیکس ادا کئے لگائے گئے سینکڑوں اشتہاری بورڈز بھی تاحال سڑکوں کی زینت بنے ہوئے ہیں،بلدیہ کراچی کا 800سے زائد اشتہاری بورڈز ہٹانے کا دعویٰ،سائن بورڈز کا اسٹرکچر غائب،لوکل ٹیکسز کے حکام محکمہ میڈ یا مینجمنٹ کو غلط اعدادوشما فراہم کر کے ر ایڈ منسٹریٹر اور عوام کو گمراہ کرنے میں مصروف ہوگئے،تفصیلات کے مطابق آئوٹ ڈور ایڈ ورٹائزرز کا کہنا ہے کہ بلدیہ کراچی محکمہ لوکل ٹیکسز کے حکام نے شہر میں غیرقانونی ہورڈنگ بورڈز کے خلاف کارروائی کے مبینہ طور پر غلط اعدادوشمار دیکر ایڈ منسٹریٹر کراچی اور شہریوں کو گمراہ کرنے کی کوشش شروع کردی ہے،شہر میں 800 سے زائد اشتہاری بورڈز ہٹائے جانے کے دعوے کوشہری حلقوں اور آئوٹ ڈور ایڈ ورٹائزرز نے مضحکہ خیز قرار دیتے ہوئے محکمہ لوکل ٹیکس سے ہٹائے گئے سائن بورڈز کے اسٹرکچر کا ریکارڈ طلب کرلیا ہے،ذرائع کا کہنا ہے کہ محکمے کی جانب سے خلاف ضابطہ اشتہاری بورڈز کے خلاف کارروائی کے بلندوبانگ دعویٰ کر کے خلاف ضابطہ بورڈز کے خلاف مہم سے توجہ ہٹانے کی کوشش کی جارہی ہے آئوٹ ڈور ایڈورٹائزرز کا کہنا ہے کہ جتنے سائن بورڈز ہٹائے جانے کا بلدیہ کراچی کی جانب سے دعویٰ کیا جارہا ہے اس کے ضبط شدہ اسٹرکچر رکھنے کیلئے وسیع جگہ د رکار ہے جس طرح سابق سٹی ناظم مصطفی کمال کے دور میں سوک سینٹر کے سامنے گرائونڈ میں بڑے پیمانے پر ضبط کئے گئے بورڈز رکھے گئے تھے۔آئوٹ ڈور ایڈ ورٹائزرز نے محکمہ لوکل ٹیکسز کی جانب سے کئے جانے والے دعوے کی تحقیقات کرانے کا مطالبہ کیا ہے۔ علاوہ ازیں سائن بورڈز کے اربوں روپے کے اسکینڈل پر تحقیقاتی اداروں کے متحرک ہونے کے بعد گذشتہ روز محکمہ لوکل ٹیکسز کی جانب سے کارساز روڈ پر لگائے گئے ایک درجن سے زائد پائی لون کو ہٹادیا گیا ہے،ذرائع کا کہنا ہے کہ مذکورہ بورڈز محکمہ کے افسران کی مبینہ آشیرباد سے ہی لگائے گئے تھے،تاہم تحقیقات کے خوف سے ایسی تما م ہورڈنگز سائٹس کے خلاف آپریشن شروع کردیا گیا ہے ۔

Tags: