گلستان جوہر میں اربوں روپے کی 30 ایکڑ سرکاری اراضی واگذار

August 13, 2015 3:42 pm0 commentsViews: 20

لینڈ مافیا کے سرغنہ کیخلاف مقدمہ درج‘ 2 کارندے گرفتار‘ بلاک 6 میں اراضی خان گبول گوٹھ کے نام سے فروخت کی جارہی تھی
بھاری مشینری کی مدد سے وسیع اراضی پر تعمیرکردہ تجاوزات مسمار کردی گئیں‘ رینجرز کی موبائل اور پولیس بھی موجود تھی
کراچی( کرائم ڈیسک) بلدیہ عظمیٰ کے انسداد تجاوزات سیل نے گلستان جوہر بلاک6 میں کارروائی کرتے ہوئے 4 ارب روپے مالیت کی30 ایکڑ سرکاری اراضی واگزار کرا لی۔ گلستان جوہر پولیس نے لینڈ مافیا کے سرغنہ پیر دیدار سر ہندی کے خلاف مقدمہ درج کرکے 2 کارندوں کو گرفتار کرلیا۔ تفصیلات کے مطابق بلدیہ عظمیٰ نے گلستان جوہر بلاک6 میں دبئی ہائوس سے متصل اراضی پر لینڈ مافیا کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے30 ایکڑ اراضی واگزار کر والی۔ ترجمان کے ایم سی کے مطابق گلستان جوہر میں6 میں30 ایکڑ اراضی میر خان گبول گوٹھ کے نام سے بیچی جا رہی تھی جسے واگزار کروا لیا ہے اور لینڈ مافیا کے سرغنہ پیر دیدار سرہندی کے خلاف مقدمہ بھی درج کر لیا گیا ہے۔ کارروائی کے دوران بھاری مشینری کے ذریعے وسیع اراضی پر تعمیر کر دہ تجاوزات مسمار کر دی گئیں جبکہ کارروائی میں پولیس اور رینجرز کی ایک درجن سے زائد موبائلوں اور درجنوں اہلکاروں نے حصہ لیا۔ ترجمان کے مطابق30 ایکڑ اراضی کی مالیت 4 ارب روپے ہے۔ گلستان جوہر پولیس نے کارروائی کے دوران لینڈ مافیا کے 2 کارندوں غلام قادر اور غلام نبی کو گرفتار کرکے اسلحہ بر آمد کرلیا۔

Tags: