دہشتگردوں نے 4 پولیس اہلکاروں سمیت 7 افراد کو قتل کردیا

August 13, 2015 3:46 pm0 commentsViews: 19

کورنگی جی ایریا میں ہوٹل پر کھانا کھانے والے پولیس اہلکاروں پر موٹر سائیکل سوار دہشت گردوں نے اندھا دھند گولیاں برسادیں‘ فرار ہوتے وقت سرکاری اسلحہ بھی لے گئے
اورنگی اقبال مارکیٹ میں فائرنگ سے نوجوان ہلاک‘ چوکنڈی قبرستان کے قریب گولی لگنے سے بچہ ہلاک‘ ملیر میں فائرنگ سے زخمی ہونے والا اسپتال پہنچ کر دم توڑ گیا
کراچی( کرائم رپورٹر) کراچی میں جشن آزادی سے قبل دہشت گرد پھر سرگرم ہوگئے‘ 4 پولیس اہلکاروں سمیت 7 افراد کو فائرنگ کرکے قتل کردیا‘ ایک بچہ بھی مارا گیا‘ پولیس پر منظم انداز میں حملہ کیا گیا‘ واقعات کے مطابق زمان ٹائون کے علاقے کورنگی ساڑھے پانچ نمبر جی ایریا میں قائم حنیف نہاری ہوٹل کے اندر پولیس اہلکار کھانا کھا رہے تھے کہ اس دوران 2موٹرسائیکلوںپر سوار چار نامعلوم دہشتگردآئے اور ہوٹل میں داخل ہوئے اور کھانا کھانے والے پولیس اہلکاروں پر اندھا دھند فائرنگ کردی ،جس کے نتیجے میں ایک پولیس افسراورتین اہلکار شدید زخمی ہوئے جبکہ ہوٹل کے مالک کا بیٹا سمیت 2افراد معمولی زخمی ہوگئے، دہشتگرد کارروائی کے بعد کرسی پر رکھی ہوئی چار ایس ایم جی رائفل با آسانی لیکر فرارہوگئے علاقے میں خوف وہراس اور کشیدگی پھیل گئی جبکہ ہوٹل میں بیٹھے ہوئے افراد میں بھگدوڑ مچ گئی ،تاہم اس اطلاع پر پولیس اور رینجرز کی بھاری نفری جائے وقوعہ پر پہنچ گئی اور زخمیوں کو اسپتال منتقل کیا جارہا تھا کہ راستے میں چارو ں پولیس اہلکار دم توڑ گئے جبکہ زخمی آصف صغیر اور ہوٹل کے مالک بیٹے کو طبی امداد دیاجارہی ہے ، دہشتگردوں کی فائرنگ سے شہید ہونے والوں کی شناخت اے ایس آئی 45سالہ سید عقیل احمد ولد طفیل ،اہلکار 42سالہ اختر ولد عبدالسلام ،46سالہ جمیل ولد عبدالرشید اور35سالہ محمد انوار ولد ابرارحسین کے نام سے ہوئی ،ایس پی لانڈھی افنان امین اور سب انسپکٹراصغر نے بتایاکہ یہ پولیس اہلکار معمول کے مطابق حنیف نہاری ہوٹل کے اندر معمول کے مطابق کھانا کھا رہے تھے کہ تعاقب کے بعد دہشتگروں نے ہوٹل میں داخل ہوکر پولیس اہلکاروں کے سراور سینے پر گولیاں برسائیں‘ اقبال مارکیٹ کے علاقے اورنگی سیکٹر ساڑھے گیارہ چشتی نگر کیفے تسکین کے قریب نامعلوم موٹر سائیکل سوار ملزمان کی فائرنگ سے 22 سالہ نوید حسین ولد صدام حسین موقع پر ہلاک ہوگیا۔مقتول علاقے میںسموسے فروخت کرتا تھا وہ واقعہ کے وقت بھی مذکورہ مقام پر سموسے فروخت کررہا تھا کہ پہلے سے گھات لگائے دہشت گردوں نے فائرنگ کرکے قتل کردیا ۔ واقعہ خاندانی دشمنی کا شاخسانہ معلوم ہوتا ہے۔ شاہ لطیف کے علاقے بھینس کالونی چوکنڈی قبرستان کے گرائونڈ میں نامعلوم سمت سے آنے والی گولی کمر میں لگنے سے 8سالہ حسین احمد ولد گل خان ہلاک ہوگیا،مقتول گرائونڈ میں دیگر بچوں کے ساتھ بیٹھ کر میچ دیکھ رہا تھا کہ نامعلوم سمت سے آنے والی گولی کمر میں لگنے سے موقع پر ہلاک ہوگیا۔ ملیر سٹی کے علاقے بکرا پیڑی پیر محفوظ شاہ روڈ پر واقعہ ایک گھر کے اندر فائرنگ کے واقعے میں 55 سالہ سید انصاراکبر زیدی ولد سید اقتدار زیدی شدید زخمی ہوئے،جنہیں پہلے نجی اور بعدازاں جناح اسپتال لایا گیا جہاں وہ زیادہ خون بہہ جانے کے نتیجے میں دم توڑ گئے۔ تاہم پولیس نے شبہ ظاہر کیاہے کہ قتل کی واردات کسی ذاتی رانجش کا شاخسانہ معلوم ہوتی ہے ۔

Tags: