دبئی سے بیدخل ٹارگٹ کلرز کے سرغنہ نے اہم راز اگل دیئے متحدہ کیخلاف وعدہ معاف گواہ بننے کا امکان

August 14, 2015 3:11 pm0 commentsViews: 19

بھتہ خوری اور ٹارگٹ کلنگ کے مرکزی کردار کا کاشف عرف ڈیوڈ کا سائٹ انڈسٹری زون میں 3600 فیکٹریوں سے بھتہ لینے کا اعتراف
ملزم اجمل پہاڑی کا قریبی ساتھی اور 50 سے زائد ٹارگٹ کلنگ کی وارداتوں میں مطلوب تھا‘ مزید تفتیش جاری
کراچی( نیوز ڈیسک) ٹارگٹ کلرز اور بھتہ خوروں کے سرغہ کاشف عرف ڈیوڈ نے ابتدائی تفتیش میں سنسنی خیز انکشافات کئے ہیں‘ ملزم نے سائٹ کی3600 فیکٹریوں اور تاجروں سے بھتہ وصولی کا اعتراف کیاہے‘ ٹارگٹ کلر متحدہ کے رہنمائوں کے خلاف وعدہ معاف گواہ کے طور پر سامنے آسکتا ہے‘ ذرائع کے مطابق اسلام آباد ایئر پورٹ سے گرفتار ہونیوالے ٹارگٹ کلر اور بھتہ خور کاشف عرف ڈیوڈ نے ابتدائی تفتیش میں کئی اہم راز اگل دیئے ہیں‘ ملزم شہر میں ہونیوالی ٹارگٹ کلنگ کے حوالے سے مرکزی کردار ہے اور وہ کراچی آپریشن کے خوف سے بھاگ کر سائوتھ افریقہ چلا گیا تھا‘ جہاں سے وہ دبئی آیا تھا جہاں وہ پکڑا گیا‘ دبئی حکومت نے کاشف عرف ڈیوڈ کو بے دخل کیا تو پاکستانی سفارت خانے کو اطلاع دی گئی جسے حساس اداروں نے متحدہ عرب امارات سے پاکستان واپسی پر گرفتار کرلیا‘ ٹارگٹ کلرز اور بھتہ خوروں کے سرغنہ کاشف عرف ڈیوڈ نے ابتدائی تفتیش میں سنسنی خیز انکشافات کرتے ہوئے سائٹ انڈسٹری زون میں موجو د3600 فیکٹریوں اور ملزمان سے بھتہ وصولی کا اعتراف کیا ہے‘ اس کام کیلئے اس نے سائٹ لمیٹڈ کی عمارت میں دفتر بھی بنا رکھا تھا‘ تفتیش کاروں کے مطابق ملزم نے بھتے کی رقم کے استعمال ‘ اس کی ٹرانزیکشنز‘ دہشت گردی اور بھتہ خوری کی وارداتوں کے احکامات کے حوالے سے انکشافات کئے ہیں۔ تفتیش کار ملزم سے رینجرز کی ایم کیو ایم کو دی گئی ٹارگٹ کلرز کی فہرست میں شامل ملزموں کے حوالے سے بھی تفتیش کررہے ہیں۔ واضح رہے کہ کاشف عرف ڈیوڈاجمل پہاڑی کا قریبی ساتھی اور پولیس کو 50 سے زائد ٹارگٹ کلنگ کی وارداتوں میں مطلوب تھا۔

Tags: