واٹر بورڈ کی سخت کارروائیاں پانی چوروںکی کمر توڑ دی گئی

August 14, 2015 3:16 pm0 commentsViews: 23

ایم ڈی واٹر بورڈ کی ہدایت پر کراچی میں پانی چوری کے وسیع نیٹ ورک کے خلاف گرینڈ آپریشن جمعرات کے روز بھی جاری رہا
سیفل گوٹھ میں 4 غیر قانونی ہائیڈرنٹس مسمار تین ہزار فٹ زیر زمین پائپ کھود کر نکال دیا گیا‘ ہیوی مشینری سے کھدائی کی گئی
کراچی ( سٹی رپورٹر) ایم ڈی واٹر بورڈ کی پانی چوروں کے خلاف تابڑ توڑ کارروائیاں ،ہاشم زیدی کی سخت کارروائیوں نے پانی چوروں کی کمر توڑ دی ،پانی کی چوری میں واضح کمی کے بعد شہر میں پانی کا بحران دم توڑنے لگا،کراچی واٹراینڈ سیوریج بورڈ کا کراچی میں پانی چوری کے وسیع نیٹ ورک کیخلاف گرینڈ آپریشن جمعرات کو بھی جاری رہا ، واٹربورڈ کی تاریخ میں پکڑے جانے والے پانی چوری کے سب سے بڑے اور طویل رقبہ پر قائم نیٹ ورک کامکمل خاتمہ کردیا گیا ،سیفل گوٹھ میں 4غیر قانونی ہائیڈرنٹس مسمار3ہزار فٹ زیر زمین پائپ کھود کرنکال دیا۔ تفصیلات کے مطابق ایم ڈی واٹربورڈ سید ہاشم رضا زیدی نے واٹربورڈ کے واٹر ٹرنک مین(WTM) کے چیف انجینئر اور چیف سیکیورٹی آفیسر سمیت دیگر متعلقہ افسران کو ہدایت کی کہ شہر میں قائم پانی چوری کے خفیہ نیٹ ورکس کا سراغ لگایا جائے اور واٹربورڈ کی لائنوں سے پانی چوری کرکے شہریوں کو مہنگے داموں پانی فروخت کرنے والوں کیخلاف کارروائی کی جائے ایم ڈی واٹربورڈ سید ہاشم رضا زیدی کی ان ہدایات پر منگل کی سہہ پہر سپرہائی وے سیفل گوٹھ سائٹ 2اور اسکیم 33سائٹ میں4ناجائز ہائیڈرنٹس کے خاتمہ کیلئے آپریشن کیا تاہم زیرزمین پائپ لائن کی کھدائی باقی تھی لہٰذا جمعرات کو رینجرز اور پولیس کی مدد سے واٹربورڈ کے ڈس کنکشن اسکواڈ نے ایک بار پھر پانی چوروں کیخلاف کارروائی کی اور مزید 4 ہائیڈرنٹس کو مسمار کرکے 2اور 4انچ کے 8 کنکشن کاٹ دیئے گئے جو54انچ کی مین لائن سے زیر زمین لگائے گئے تھے ،ہیوی مشینری سے کھدائی کرکے 3000 فٹ پائپ بھی اکھاڑ کر قبضے میں لے لئے گئے اور پانی چوری کے اس سب سے بڑے نیٹ ورک کو تہس نہس کردیا گیا ہے ،قانون نافذ کرنیوالے اداروں کی مدد سے کئے گئے اس آپریشن سے لاکھو ں گیلن پانی کی چوری روک دی گئی ہے ،واٹربورڈ پانی چوروں کیخلاف نئے آرڈیننس کے تحت مقدمہ درج کرارہا ہے جس سے عدالتی کارروائی کے ذریعے 10لاکھ روپے جرمانہ دس سال قید یا دونوں سزائیں دی جاسکتی ہیں ۔

Tags: