ٹیکس دہندگان کیلئے نئی 5سالہ آڈٹ پالیسی متعارف کرانے کا فیصلہ

August 15, 2015 4:21 pm0 commentsViews: 28

ایف بی آر ٹیکس دہندگان کے لیے الگ آڈٹ ڈویژن قائم کرنے پر بھی غور کررہی ہے
اسلام آباد( آن لائن) ایف بی آر نے ٹیکس دہندگان کے آڈٹ کیلئے نئی 5 سالہ آڈٹ پالیسی متعارف کروانے کا فیصلہ کیا ہے۔ ایف بی آر نے نئی5 سالہ آڈٹ پالیسی کا ابتدائی مسودہ تیار کرلیا ہے۔ جسے متعلقہ اسٹیک ہولڈروں کی باہمی مشاورت کے ساتھ حتمی شکل دی جائے گی اور اس کے بعد منظوری کیلئے ایف بی آر کے بورڈ ان کونسل کے اجلاس میں پیش کیا جائے گا۔ ذرائع کے مطابق اس نئی پالیسی کے تحت مختلف اسکیموں اور مختلف شعبوں کے لئے آڈٹ کے نئے میکنزم و طریقہ کار متعارف کروائے جائیں گے اور پالیسی کے تحت ٹیکس دہندگان کا آڈٹ کیا جائے گا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ایک تجویز یہ بھی زیر غور ہے کہ آڈٹ کیلئے الگ ڈویژن قائم کر دیا جائے جو اس 5 سالہ آڈٹ پالیسی پر عملدر آمد کروانے کا ذمہ دار ہوگا اور اس پالیسی کے تحت ٹیکس دہندگان کا آڈٹ کرکے ریکوری کی جائے گی۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ٹیکس دہندگان کے آڈٹ کے لئے الگ سے آڈٹ ڈویژن قائم کرنے کی تجویز کا جائزہ لیا جا رہا ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ اس حوالے سے وزارت خزانہ کی جانب سے قائم کر دہ ٹیکس اصلاحات کمیشن نے بھی اپنی رپورٹ میں تجویز دی ہے کہ ٹیکس دہندگان کے آڈٹ کے فنکشن کو باقی ایف بی آر سے مکمل طور پر علیحدہ کر دیا جائے۔

Tags: