ہائی ویز پر پولیس چیک پوسٹوں کی تعمیر میں سنگین بد عنوانیاں

August 15, 2015 4:55 pm0 commentsViews: 24

منصوبے پر44 کروڑ سے زائد رقم خرچ ہو چکی ہے،8 سال گزرنے کے باوجود منصوبہ مکمل نہ ہو سکا
کراچی، حیدرآباد، شہید بے نظیر آباد، سکھر، گھوٹکی، نوشہرو فیروز، لاڑکانہ، جیک آباد میں چیک پوسٹیں زیر تعمیر ہیں
کراچی( نیوز ڈیسک) سندھ بھر کے9 اضلاع میں ہائی ویز 112 پولیس چیک پوسٹ تعمیر کرنے کے منصوبے میں سنگین بد عنوانیوںکا انکشاف ہوا ہے‘ تاہم منصوبے پر43.60 کروڑ روپے خرچ ہونے کے بعد بھی ہائی ویز پر پولیس چیک پوسٹیں ابھی تک قائم نہیں ہوسکی ہیں اور اس منصوبے پر صوبائی حکومت نے مزید4 کروڑ روپے لگانے کی منظور دیدی ہے‘ ذرائع کے مطابق محکمہ داخلہ سندھ کی جانب سے کراچی ‘حیدر آباد‘ میر پور خاص‘ شہید بینظیر آباد‘ سکھر گھوٹکی‘ نوشہرو فیروز‘ لاڑکانہ اور جیکب آباد کی ہائی ویز پر جرائم میں کمی کیلئے105 پولیس چیک پوسٹ قائم کرنے کے منصوبے کو 8 سال کے بعد مکمل نہیں کیا جاسکتاہے‘ منصوبہ 6جنوری2008-09 کو منظور ہوا تھا جس کی کل لاگت 43.60 کروڑ روپے ہے‘ منصوبے پر سوا44کروڑ روپے خرچ ہوگئے ہیں لیکن منصوبہ ابھی تک مکمل نہیں ہوسکا ہے تاہم سندھ حکومت نے معاملے کی تحقیقات کرائے بغیر اس منصوبے کیلئے مزید چار کروڑ روپے منظور کرلئے ہیں‘ دوسری جانب محکمہ داخلہ کی جانب سے پورٹ قاسم اور کراچی پورٹ سے نکلنے والے سامان کی حفاظت کیلئے مزید 7 پولیس چیک پوسٹ کی منظوری دی ہے جس کی کل لاگت ڈیڑھ کروڑ روپے ہے‘ منصوبہ ابھی تک منظور نہیں ہوسکا ہے۔

Tags: