آج صبح سانحہ اٹک کا مقدمہ درج‘ وزیر اعظم نے مشاورتی اجلاس طلب کرلیا

August 17, 2015 4:49 pm0 commentsViews: 21

اٹک میں کھلی کچہری کے دوران خودکش دھماکے میں وزیر داخلہ پنجاب کرنل (ر) شجاع خانزادہ سمیت 22 افراد ہلاک ہوگئے
واقعہ میں زخمی ہونے والے 20 افراد کی حالت نازک‘ ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ‘ لشکری جھنگوی نے واقعہ کی ذمہ داری قبول کرلی
اسلام آباد( مانیٹرنگ ڈیسک) پنجاب کے وزیر داخلہ کرنل ریٹائرڈ شجاع سمیت خود کش حملے میں22 افراد کی ہلاکت کا مقدمہ آج درج کر لیا جائے گا، جبکہ وزیر اعظم نے آج صبح مشاورتی اجلاس طلب کر لیا۔ اتوار کے روز اٹک میں کھلی کچہری کے دوران خود کش دھماکے کے نتیجے میںصوبائی وزیر داخلہ کرنل ریٹائرڈ شجاع خانزادہ، ڈی ایس پی خضرو شہید، شوکت شاہ گیلانی سمیت22 افراد جاں بحق اور متعدد افراد ملبے تلے دب گئے۔20 سے زائد زخمیوں میں بعض کی حالت نازک ہے جس کے باعث ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ہے۔ کالعدم لشکر جھنگوی نے دھماکے کی ذمہ داری قبول کر لی ہے۔ اتوار کو اٹک میں موٹر وے سے 25سے30 کلو میٹر دور صوبائی وزیر داخلہ شجاع خانزادہ کے ڈیرہ گائوں شادی خان میں بم دھماکے کے نتیجے میں دس مرلہ پر قائم عمارت کی چھت گر گئی جس کے نتیجے میں صوبائی وزیر کرنل ریٹائرڈ شجاع خانزادہ سمیت ڈیرے میں موجود درجنوں افراد نے عمارت میں داخل ہونے کی کوشش کی جن کو 4 افراد نے روکنے کی کوشش کی جس پر اس نے اپنے آپ کو دھماکے سے اڑا لیا وزیر داخلہ پنجاب کے بھتیجے سہراب خانزادہ نے بتایا کہ وہ چائے لینے باورچی خانے میں گیا تو دھماکا ہوگیا سہراب خانزادہ کے مطابق عمارت میں 20 سے زائد افراد موجود تھے جو کہ ملبے کے نیچے دب گئے۔ وزیر مملکت پارلیمانی امور شیخ آفتاب احمد کے مطابق جس وقت دھماکہ ہوا اس وقت وزیر داخلہ پنجاب ڈیرے پر علاقہ مکینوں کے مسائل سن رہے تھے اس لئے شجاع خانزادہ کے ڈیرے پر کافی افراد موجود تھے تاہم شادی خان نواحی علاقہ ہونے کے باعث فوری طور پر امدادی سرگرمیاں نہیں ہو سکیں اور دو سے تین گھنٹے تک لوگ ملبے تلے رہے تاہم زخمیوں کو اسپتال منتقل کرنے کیلئے وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان کی ہدایت پر ہیلی کاپٹر فراہم کیا گیا۔

دہشتگردوں کے خلاف نیشنل ایکشن پلان کو کامیاب بنائینگے وزیراعظم
شجاع خانزادہ قوم کے بہادر سپوت تھے‘ ان کی قربانی رائیگاں نہیں جائے گی‘ آخری دہشت گرد کے خاتمے تک کام جاری رکھیں گے
اسلام آباد( نیوز ڈیسک) وزیراعظم نواز شریف نے صوبائی وزیر داخلہ کرنل ریٹائرڈ شجاع خزادنہ پرخودکش حملے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت نیشنل ایکشن پلان کو ہر صورت کامیاب بنائے گی‘ دہشت گردوں کو ان کی کمین گاہوں سے ڈھونڈ کر ختم کریں گے‘ قانون نافذ کرنیوالے ادارے آخری دہشت گرد کے خاتمے تک اپنا کام جاری رکھیں‘ شجاع خانزادہ قوم کے بہاد ر سپوت تھے‘ دہشت گردی کیخلاف جنگ میں خدمات ہمیشہ یاد رکھی جائیں گی‘ قربانی رائیگاں نہیں جائیگی‘ دعا ہے کہ اللہ تعالیٰ مرحوم کو اپنے جوار حمت میں جگہ دے اور لواحقین کو یہ صدمہ برداشت کرنے کی ہمت عطا فرمائے‘ وزیراعظم نے کہا کہ حکومت دہشت گردون کیخلاف نیشنل ایکشن پلان کو ہر صورت کامیاب بنائے گی‘ شجاع خانزادہ کی شہادت سے دہشت گردی کو جڑ سے اکھاڑنے کا پیغام ملا ہے۔

Tags: