کراچی میں سیکورٹی فورسز نے گھیرا تنگ کردیا مقابلوں میں9دہشت گرد مارے گئے اسلحہ بم اور بارودی مواد برآمد

August 17, 2015 4:57 pm0 commentsViews: 27

شہر کا امن تباہ کرنے کے منصوبے بنانیوالے کالعدم تنظیموں کے دہشت گردوں، گینگ وار کارندوں، ٹارگٹ کلرز سمیت دیگر جرائم پیشہ عناصر کے خاتمے کیلئے آپریشن میںتیزی
صبح سویرے منگھوپیر میں پولیس اور حساس اداروں نے مشترکہ کارروائی کے دوران کالعدم تنظیم سے تعلق رکھنے والے پانچ دہشت گردوں کو مقابلے میں ہلاک کردیا جو کراچی میں بڑی تخریب کاری کا منصوبہ بنارہے تھے، دہشت گردوں کے مزید ساتھیوں کی گرفتاری کے لیے کارروائی کی جارہی ہیں
میمن گوٹھ میں پولیس اور رینجرز سے مقابلے میں بلوچ لبریشن آرمی کے چار دہشت گرد ہلاک ہوگئے، ملزمان نے گھیرائو ہونے پر سیکورٹی فورسز پر مورچہ بند فائرنگ شروع کردی تھی، مقابلہ کافی دیر جاری رہا، حب میں چینی باشندوں کے قتل کے علاوہ گھارو میں ریلوے ٹریک کو بم سے اڑانے میں بھی ملوث تھے
کراچی( کرائم رپورٹر) آپریشن میں تیزی آگئی، کراچی میں سیکورٹی فورسز نے کالعدم تنظیموں کے دہشت گردوں گینگ وار کارندوں اور جرائم پیشہ عناصر و ٹارگٹ کلر کے خلاف گھیرا تنگ کر دیا مقابلوں میں کالعدم تنظیموں کے5 دہشت گرد اور بلوچ لبریشن آرمی کے چار ملزمان کو مار ڈالا، پولیس ذرائع کے مطابق آج صبح منگھو پیر میں حساس ادارے اور پولیس نے مشترکہ کارروائی کرکے کالعدم جماعت کے5 دہشت گردوں کو ہلاک کر دیا ۔ تفصیلات کے مطابق آج صبح منگھو پیر تھانے کی حدود خیر آباد روڈ پر ملزمان کی موجودگی کی اطلاع پر کارروائی کی تو وہاں موجود دہشت گردوں نے پولیس پر فائرنگ کر دی پولیس کی جوابی فائرنگ میں5 دہشت گرد مارے گئے۔ پولیس نے ضابطے کی کارروائی کیلئے لاشوں کو اسپتال منتقل کر دیا۔ پولیس نے دہشت گردوں کے قبضے سے اسلحہ، بم، بارودی مواد، دستی بم و دیگر سامان بر آمد کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔ پولیس نے بتایا کہ دہشت گردوں کی شناخت نہیں ہو سکی ہے۔ ان کی عمریں 32 سے35 سال کے درمیان ہیں۔ اور شکل و صورت سے پٹھان معلوم ہوتے ہیں۔ پولیس کا کہنا ہے کہ دہشت گردوں کا تعلق کالعدم جماعت سے تھا جو کہ کراچی میں بڑی تخریب کاری کا منصوبہ بنا رہے تھے۔ جسے پولیس نیندیں کام بنا دیا ہے۔ پولیس کی جانب سے دہشت گرد دہشت گردوں کے مزید ساتھیوں کی گرفتاری کیلئے کارروائی کی جا رہی ہے۔ علاوہ ازیں گزشتہ روز رینجرز اور پولیس نے میمن گوٹھ میں مشترکہ مبینہ مقابلے کے دوران بلوچ لبریشن آرمی کے چار دہشت گرد وں کو ہلاک کردیا،پاکستان رینجرزسندھ اور میمن گوٹھ پولیس کے مطابق رینجرز انٹیلی جنس اور پولیس کو خفیہ اطلاع ملی تھی کہ میمن گوٹھ میںقائم اسماعیل شاہ درگاہ کے قریب ایک مکان میں خطرناک دہشت گرد موجود ہیں ، رینجرز اور پولیس نے اطلاع ملتے ہی علاقے کی ناکہ بندی کرنے کے بعد مذکورہ گھر کی طرف دہشت گردوں کو گرفتار کرنے کیلئے پیش قدمی شروع کی ،اس دوران دہشتگردوں نے رینجرز اور پولیس پر اندھا دھند فائرنگ شروع کردی،رینجرز اورپولیس بھی مورچہ بند ہوگئے اور دہشتگردوں سے جوابی فائرنگ کا سلسلہ شروع کردیا ،فائرنگ کی ترتراہٹ پر علاقے میںخوف وہراس اور کشیدگی پھیل گئی، ایک گھنٹے تک مقابلہ جاری رہا ،تاہم رینجرزاورپو لیس کی فائرنگ سے چار دہشتگرد ہلاک اور انکے چند ساتھی فرارہوگئے ،رینجرز اور پولیس نے مکان میں داخل ہوکر تین دہشتگردوں کی لاشیں اور ایک شدیدزخمی دہشتگرد کو تحویل میں لیکر جناح اسپتال منتقل کررہے تھے زخمی ہونے والا چوتھا دہشتگردراستے میں دم توڑ گیا ،ایس ایچ اومیمن گوٹھ اسد اللہ نے بتایاکہ دہشتگردوں کے قبضے سے تین 30 بور پستول اور ایک نائن ایم ایم پستول کے علاوہ سوزوکی ہائی روئوف نمبرCK-2797 اور موٹر سائیکل نمبر KAG-2716برآمد ہوئی جو پولیس نے اپنے قبضے میں کرلی ، ایس ایچ او اسد اللہ نے بتایاکہ ہلاک ہونے والے دو دہشتگردوں کی شناخت30 سالہ ناصر حسین ولد داد محمدبلوچ اور 28 سالہ زاہد علی ولد اکبر علی کے نام سے ہوگئی جبکہ دو ہشتگردوں کی شناخت حتمی طور پر نہیں ہوسکی ،ہلاک ہونے والے دہشت گردوں کا تعلق بلوچ لیبریشن آرمی سے تھا ان دہشتگردوں نے 2010 میں حب چیک پوسٹ پر فائرنگ کرکے چینی باشندوں کو قتل کرنے کے علاوہ گھارو کے قریب ریلوے ٹریک کو بم سے اڑا یا تھا ، ہلاک ہونے والے دہشت گرد اغواء برائے تاوان، بھتہ خوری ، اقدام قتل سمیت مختلف وارداتوں میں ملوث تھے۔

Tags: