سندھ تاجر اتحاد،18 اگست کو انکم ٹیکس بلڈنگ کا گھیرائو کرے گا

August 17, 2015 5:25 pm0 commentsViews: 10

انجمن تاجران پاکستان کے دونوں گروپ احتجاجی تحریک میں یکجا ہو گئے، تاجروں سے مظاہرے میں شرکت کی اپیل
ود ہولڈنگ ٹیکس واپس نہ لیا گیا تو اگست کے آخر میں پہیہ جام ہڑتال کی جائے گی، جمیل پراچہ
کراچی( پ ر) ملک بھر میں 18اگست کو کئے جانے والے مظاہرے ٹوکن مظاہرے ہونگے اس کے بعد بھر پور احتجاجی تحریک کا آغاز کیا جائے گا۔ سندھ تاجر اتحاد کے تحت18 اگست3 بجے سہ پہر انکم ٹیکس بلڈنگ کے سامنے ود ہولڈنگ ٹیکس بینکوں سے کاٹنے کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا جائے گا گزشتہ روز لاہور میں انجمن تاجران پاکستان کے دونوں گروپس اور ملک بھر کے تمام تاجر ود ہولڈنگ ٹیکس کے خلاف احتجاجی تحریک میں یکجا ء ہوگئے ہیں اور تمام تاجر رہنمائوں نے متفقہ فیصلہ کیا ہے کہ اگر حکومت نے ود ہولڈنگ ٹیکس فی الفور واپس نہ لیا تو اگست کے آخری ہفتہ میں ملک گیر پہیہ جام ہڑتال کی جائے گی۔ 18 اگست کو ملک بھر کےFBR کے ریجنل آفسز کے سامنے احتجاج کیا جائے گا حکومت سرد مہری کا مظاہرہ کرنے کے بجائے تاجروں کے اصولی موقف کو سامنے رکھتے ہوئے0.3% ظالمانہ ٹیکس بینکوں سے فی الفور واپس لے جمیل پراچہ نے کہا کہ اب ملک بھر کے تاجر ایک پلیٹ فارم پر جمع ہوگئے ہیں۔ اگر تاجروں کا معاشی قتل عام بند نہ ہوا تو احتجاج کا دائرہ وسیع کیا جائے گا۔ جس میں ہڑتالیں احتجاجی مظاہرے، سول نا فرمانی کی تحریک اور جیل بھرو تحریک بھی چلائی جا سکتی ہے انہوں نے کہا کہ اگر حکومت کو ٹیکس نیٹ میں اضافہ کرنا ہے تو تاجر ایسوسی ایشنز سے رابطہ کرے نہ کہ چور دروازے سے ٹیکس وصول کرنے کی کوشش کرے۔

Tags: