اورنگی ٹائون میں متحدہ کے کارکن کو قتل کر دیا گیا – دیگر حادثات و واقعات میں مزید ہلاکتیں

August 19, 2015 5:08 pm0 commentsViews: 21

مقتول گھر سے ڈیوٹی پر جانے کیلئے نکلا تھا، پہلے سے گھاٹ لگا کر بیٹھے دہشت گردوں نے فائرنگ کرکے ہلاک کر دیا
ملزمان نے مقتول کو زخمی حالت میں اسپتال لے جانے والی چھیپا ایمبولینس پر فائرنگ کی واردات کے بعد فرار ہو گئے
کراچی (اسٹاف رپورٹر)اورنگی ٹائون میں نامعلوم افراد کی فائرنگ سے متحدہ قومی موومنٹ کا کارکن ہلاک اور چھیپا ایمبولینس کا ڈرائیور زخمی ہوگیا، تفصیلات کے مطابق مومن آباد کے علاقے اورنگی ٹائون سیکٹر 10 منگل بازار کے قریب دہشت گردوں کی فائرنگ سے متحدہ قومی موومنٹ اورنگی سیکٹر کے یونٹ 124 کا سرگرم کارکن 30 سالہ رحیم الدین ولد معین الدین ہلاک چھیپا کا رضا کار 28 سالہ عمر حید شدید زخمی ہوگئے ، مقتول اورنگی چشتی نگر بابا ولایت شاہ کالونی کے مکان نمبر 342 میں رہائش پذیر تھا وہ منگل کی صبح گھر سے ڈیوٹی پر جانے کیلئے موٹر سائیکل پر نکلا کہ پہلے سے گھات لگائے دہشت گردوں نے اقبال مارکیٹ تھانے کی حدود چشتی نگر میں فائرنگ کردی ، ایک گولی کندھے پر لگنے سے زخمی ہوگیا،جو زخمی حالت میں بھاگتا ہوا مذکورہ مقام پر پہنچ گیا اور چھیپا ایمبولینس میں بیٹھ کر اسپتال جارہا تھا کہ ملزمان پیچھا کرتے ہوئے منگل بازار آگئے اور چھیپا ایمبولینس پر فائرنگ کردی جس کے نتیجے میں متحدہ کا کارکن رحیم الدین ہلاک اور چھیپا کا ڈرائیور عمر حمید زخمی ہوگیا۔

نوجوان پراسرار طور پر جاں بحق
کراچی( کرائم رپورٹر) ہاکس بے ساحل پر پکنک منانے کیلئے آنے والا نوجوان پراسرار طور پر جاں بحق ہوگیا‘ تفصیلات کے مطابق ایک نوجوان زہریلے کیڑے کے کاٹنے سے بے ہوش ہوگیا‘ واقعے کی اطلاع ایمبولینس نے اسپتال منتقل کرنے کی کوشش کی تاہم اہل خانہ نے موت کی تصدیق کرتے ہوئے لاش کو اسپتال لیجانے کے بجائے اپنی گاڑی میں لے کر چلے گئے‘ پولیس نے واقعے سے لا علمی کااظہار کیا ہے۔

نیو کراچی بلال کالونی میں فائرنگ سے ایک شخص ہلاک
نامعلوم افراد نے دکان کے اندر گولی ماری اسپتال لے جاتے ہوئے دم توڑ گیا، پولیس تفتیش کر رہی ہیں
کراچی(اسٹاف رپورٹر) نیو کراچی بلال کالونی میں پراسرار فائرنگ کے واقعے میں ایک شخص ہلاک ہوگیا۔تفصیلات کے مطابق سرسید ٹائون کے علاقے نیو کراچی بلال کالونی سیکٹر 7 میں پراسرار فائرنگ کے واقعے میں 35 سالہ مدیر الرحمن ولد نابود خان ہلاک ہوگیا،ایس ایچ او جاوید یوسفزئی کے مطابق مدیر الرحمن کو اس کے رشتے دار شدید زخمی حالت میں مین روڈ کی طرف لارہے تھے کہ علاقہ گشت پر موجود افسر فیض محمد نے انہیں وہاں روک کرفوری ایمبولینس منگوائی اور اسپتال پہنچارہے تھے کہ وہ راستے میں ہلاک ہوگیا،اس کے ساتھ موجود افراد کا کہنا تھا کہ اسے نامعلوم ملزمان نے دکان کے اندر گولی مار ی ہے،بعدازاں جب پولیس موقع پر پہنچی تو دکان میں نہ ہی خون پڑا تھا نہ ہی وہاں سے پستول کا خول ملا،ایس ایچ او نے شبہ ظاہر کیاہے کہ قتل ذاتی دشمنی کا نتیجہ ہے اورمقتول کے لواحقین پولیس سے کچھ چھپا رہے ہیں،مقتول اسی علاقے کارہائشی اور اس کا آبائی تعلق وزیرستان سے تھا،تاہم پولیس واقعے کی مزید تفتیش کررہی ہے۔

 

Tags: