لاسی گوٹھ، پانی چوری کرنے کے دوسرے بڑے نیٹ واک کیخلاف آپریشن

August 20, 2015 3:38 pm0 commentsViews: 43

واٹر بورڈ نے6 غیر قانونی ہائیڈرنٹس مسمار اور ہیوی مشنری سے زمین کھود کر طویل پائپ نکال لیے
آپریشن سے لاکھوں گیلن پانی کی چوری روک دی گئی، پانی چوروں کیخلاف مقدمات درج کیے جارہے ہیں
کراچی ( سٹی رپورٹر)صوبائی وزیر بلدیات و چیئرمین واٹربورڈ سید ناصر حسین شاہ و ایم ڈی واٹربورڈ سید ہاشم رضا زیدی کی ہدایت پر کراچی واٹراینڈ سیوریج بورڈ نے لاسی گوٹھ میں پانی چوری کے وسیع نیٹ ورک کیخلاف ہنگامی بنیادوں پر اچانک گرینڈ آپریشن کیا جو اب تک پکڑا جانے والا پانی چوری کا دوسرا بڑا اور طویل رقبہ پر قائم نیٹ ورک تھا ‘ ایم ڈی واٹربورڈ سید ہاشم رضا زیدی نے واٹربورڈ کے واٹر ٹرنک مین کے چیف انجینئر اور چیف سیکیورٹی آفیسر سمیت متعلقہ افسران کو ہدایت کی کہ واٹربورڈ کی لائنوں سے پانی چوری کرکے شہریوں کو مہنگے داموں پانی فروخت کرنے والوں کیخلاف کارروائی کی جائے‘سپر ہائی وے لاسی گوٹھ میں قائم اس ہائیڈرنٹ سے یہ علاقے پانی کی قلت سے دوچار تھے بدھ کے روز سپرہائی وے پرواقع لاسی گوٹھ اسکیم 33 میں6 ناجائز ہائیڈرنٹس کے خاتمہ کیلئے آپریشن کرتے ہوئے مسمار کردیا، لاسی گوٹھ اور ملحقہ علاقوں میں قائم ان ہائیڈرنٹس کے ساتھ واٹربورڈ کی لائنوں سے لگائے گئے 8کنکشنز کاٹ دیئے گئے جبکہ پائپ ڈیزل پمپس ،جنریٹر اور دوسرا سامان قبضہ میں لے لیا گیا،آپریشن جمعرات کو بھی جاری رہے گا، اس آپریشن سے لاکھو ں گیلن پانی کی چوری روک دی گئی ہے ،واٹربورڈ پانی چوروں کیخلاف نئے آرڈیننس کے تحت مقدمات درج کرارہا ہے جس سے عدالتی کارروائی کے ذریعے 10لاکھ روپے جرمانہ 10 سال قید یا دونوں سزائیں دی جاسکتی ہیں۔

Tags: