دہشت گردوں کے خفیہ ٹھکانے ختم کرنے کاحکم منگھوپیر میں تحریک طالبان کے دو دفاتر مسمار

August 21, 2015 3:58 pm0 commentsViews: 19

وزیراعظم نوازشریف نے کراچی آپریشن کے اگلے مرحلے میں شہر کو اسلحہ سے مکمل طور پر پاک کرنے کے احکامات جاری کردیے
ویسٹ زون پولیس کی بھاری نفری نے کمانڈوز کے ہمراہ منگھوپیر کے علاقے میں آپریشن کے دوران دہشت گردوں سمیت25مشتبہ افراد کو حراست میں لے لیا، مسمار کیے جانے والے دفاتر سے جہادی لٹریچر ،دہشت گردوں کی تصاویراور بارودی مواد برآمد
کالعدم تنظیموں کے گینگ وار کارندوں اور جرائم پیشہ عناصر کے خفیہ ٹھکانوں کا پتہ لگانے کے لیے انٹیلی جنس ایجنسیوں کو فعال کردیا گیا، کراچی کو اسلحہ سے مکمل طور پر پاک کرنے کے بعد شہر مکمل طور پرپرامن ہوجائے گا، وزیراعظم نوازشریف
کراچی( کرائم ڈیسک) کراچی شہر کو کالعدم تنظیم کے دفاتر سے پاک اور اسلحہ کے خاتمے کیلئے ایکشن شروع کردیا گیا ہے‘ وزیر اعظم کی ہدایت کے بعد رینجرز نے کراچی میں آپریشن مزید تیز کرنے کا فیصلہ کرلیا‘ کالعدم تنظیموں کے دہشت گردوں گینگ وار کارندوں اور ٹارگٹ کلرز کے خفیہ ٹھکانوں کا پتہ لگانے کیلئے انٹیلی جنس ایجنسیوں کو مزید فعال کردیا گیا جبکہ جن زمینوں پر غیر قانونی طور پر قبضے کئے گئے ہیں ان پر سے قبضے بھی ختم کرائے جائیں۔ویسٹ زون پولیس کی بھاری نفری نے منگھوپیر کے علاقے میں سرچ آپریشن کے دوران کالعدم تحریک طالبان پاکستان کے دودفاتروں کو مسمار کردیا۔تفصیلات کے مطابق ویسٹ زون کی پولیس کی بھاری نفری میں جس میں کمانڈوز بھی شامل تھے انھوں نے منگھوپیر کے علاقے سلطان آباد اور میر محمد گوٹھ میں سرچ آپریشن شروع کیا ،تین گھنٹے کے دوران پولیس کی بھاری نفری نے گھر گھر تلاشی کے د وران کالعدم تحریک طالبان پاکستان سے تعلق رکھنے والے دہشتگردوں سمیت25سے زائد مشتبہ افراد کوحراست میں لیکر چند افراد کے قبضے سے اسلحہ ،دستی بم اوربارودی مواد برآمدکرنے دعویٰ کیا ،جبکہ ایس ایچ او غلام حسین کورائی نے بتایاکہ پولیس نے سلطان آباد اور میر محمد گوٹھ میںقائم کالعدم تحریک طالبان پاکستان کے دو دفاتروں کے اندر داخل ہوکر دوکمپیوٹر،لیپ ٹاپ، جہادی لٹریچر،ہلاک ہونے والے دہشتگرددوں کی ٰ تصاویریں ،موبائل فونز،یوایس بی ،اسلحہ ،اور بارودی مواد برآمد کرنے کے بعد دونوںدفاتروں کو مسمار کر دیا ،پولیس کا کہنا ہے کہ پولیس کو اطلاع ملی تھی کہ مذکورہ علاقوں میں کالعدم تحریک طالبان پاکستان نے دو دفاترقائم کئے ہوئے ہیںاس اطلاع پر پولیس نے کارروائی کی ،ایس ایچ او کے مطابق جب پولسی انکے دفتر پہنچی تو دہشتگرد موقع سے فرارہوگئے تھے ،تاہم حراست میں لئے جانے والے افراد کو تھانے منتقل کرکے تفتیش شروع کردی ہے ۔علاوہ ازیں وزیراعظم کی ہدایت پر کراچی کو اسلحہ سے پاک کرنے کیلئے بھی جلد آپریشن شروع کیا جائیگا ذرائع کے مطابق وزیراعظم نواز شریف نے کراچی آپریشن کے اگلے مرحلے میں شہر کو اسلحے سے پاک کرنے کا عمل شروع کرنے کا عندیہ دے دیا ہے‘ گورنر ہائوس میں اہم اجلاس کی صدارت کرنے کے بعد مقامی ہوٹل میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نواز شریف نے کہا کہ آگے چل کر کراچی کو مکمل طور پر ڈی ویپنائز( اسلحہ سے پاک) کیا جائیگا تاکہ یہ خرابی جڑ سے ختم ہوجائے اور کراچی مکمل طو رپر محفوظ اور پر امن شہر بن جائے انہوں نے کہا کہ حال ہی میں جب میں بیلا روس کے دورے پر گیا تو کراچی کے تاجر صنعتکار بھی ہمراہ تھے انہوں نے کراچی میں امن قائم ہونے کے حوالے سے اطمینان کااظہار کیا اور خوشی کی بات یہ ہے کہ 2 سال پہلے تک جو غیر ملکی بزنس مین کراچی کے بجائے دبئی میں میٹنگز کرتے تھے اب وہ کراچی آنے لگے ہیں۔

Tags: