شبیر ابو طالب نے سو ارب روپے بیرون ملک بھجوانے کا اعتراف کرلیا

August 21, 2015 5:03 pm0 commentsViews: 46

غیر قانونی طور پر پانچ مختلف اکائونٹس اور کمپنیوں کے رقم بھاری اقدام بیرون ملک بھیجی گئی
ملزم سے مزید سنسنی خیز انکشافات کی توقع ایف آئی اے نے معروف تاجر محبوب موتی والا سمیت دیگر کمپنی مالکان کو آج طلب کرلیا
کراچی( کرائم ڈیسک) ایف آئی اے کے ہاتھوں حوالہ ہنڈی کے الزام میں گرفتار شبیر ابو طالب نے پانچ مختلف اکائونٹس اور کمپنیوں کے ذریعے سوا ارب روپے سے زائد کی رقم بیرون ملک منتقل کرنے کا انکشاف کیا ہے‘ ایف آئی اے نے معروف تاجر محبوب موتی والا سمیت دیگر کمپنی مالکان کو آج طلب کرلیا‘ ایف آئی اے ذرائع کے مطابق گزشتہ کئی برس سے حوالہ ہنڈی کے کاروبار میں ملوث شبیر ابو طالب نے دوران تفتیش سات مختلف منی ایکسچینج کمپنیوں کے علاوہ مختلف افراد کے ذریعے سوا ارب سے زائد رقم گزشتہ چند برسوں میں بذریعہ حوالہ ہنڈی بیرون ملک روانہ کئے جانے کا انکشاف کیا ہے‘ ذرائع کا کہنا ہے کہ ملزم کی جانب سے رقم کی بیرون ملک منتقلی کیلئے انٹر نیشنل منی ایکسچینج ‘گلیکسی ایکسچینج السارہ ایکسچینج شامل‘ الرحمن ایکسچینج بیسٹ وے ایکسچینج کے علاوہ سلمان ٹیکسٹائل اور ابو جگھندا نامی کمپنیوں کے ملوث ہونے کا انکشاف کیا ہے‘ مذکورہ کمپنیوں میں شامل کمپنیوں کے آصف بھائی‘ محبوب موتی والا بہزاد عالم‘ جنید‘ سکندر اور ثاقب اے آر وائی نامی مالکان کو بھی حوالہ ہنڈی کرنے میں اپنا شریک کار ظاہر کیا ہے‘ ذرائع کا مزید کہنا ہے کہ ملزم کی جانب سے حوالہ اور ہنڈی کیلئے استعمال کئے جانیوالوں میں پانچ مختلف اکائونٹس کی تفصیلات سے بھی حکام کو آگاہ کیا ہے‘ جن کے حوالے سے ایف آئی اے نے اسٹیٹ بینک سے تفصیلات طلب کرلی ہیں۔

Tags: