انسداد دہشت گردی کی 10 عدالتوں کو کلفٹن منتقل کرنے کا فیصلہ

August 22, 2015 4:12 pm0 commentsViews: 28

فیصلہ سندھ سیکریٹریٹ بیرکس میں فول پروف انتظامات نہ ہونے پر کیا گیا
دفاتر کی منتقلی سے وقت ضائع اور قیدیوں کولے جانا خطرناک ہوگا، بار ایسوسی ایشنز کا احتجاج
کراچی( نیوز ڈیسک) حکومت سندھ نے انسداد دہشت گردی کی10 عدالتوں کو کلفٹن منتقل کرنے کا اصولی فیصلہ کرلیا گیا۔ذرائع نے بتایا کہ سیکریٹریٹ بیرکس فریئر روڈ پر واقع10 اے ٹی سی عدالتوں میں ملزمان کی پیشی کے وقت فول پروف انتظامات نہیں کئے جا سکتے جگہ تنگ ہونے کی وجہ سے قرب و جوار میں واقع دیگر صوبائی دفاتر میں آنے والے افراد کوپریشانی کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ ان عدالتوں کو پی آئی ڈی سی سے سیکریٹریٹ بیرکس میں منتقل کرنے پر کروڑوں روپے خرچ کئے گئے تھے لیکن اب ان عدالتوں کی دوبارہ منتقلی پر مزید کروڑوں روپے خرچ کئے جائیں گے۔ ذرائع نے بتایا کہ حکومت میں شامل کرپشن مافیا درست فیصلے نہیں کرنے دیتی تا کہ کرپشن کے ذرائع پیدا ہو تے رہیں۔ مختلف بار ایسوسی ایشنزنے ساحل سمندر سے قریب واقع منشیات اور احتساب عدالت سمیت دیگر مقامات پر قائم اینٹی کرپشن بینکنگ کورٹس کو سٹی کورٹ سے متصل ریونیو آفس میں منتقل کرنے کیلئے گزشتہ دنوں احتجاج بھی کیا گیا تھا۔ اس سلسلے میں ممتاز قانون دان اور پاکستان بار کونسل کے ممبر شہادت اعوان ایڈووکیٹ نے کہا کہ اے ٹی سی عدالتوں کو ساحل سمندر پر منتقل کرنے سے وکلاء کو پریشانی اور ان کا وقت ضائع ہوگا۔ خطرناک قیدیوں کو بھی دور دراز علاقوں میں جانا خطرے کا باعث ہو سکتا ہے۔

Tags: