حکومت کی مزید2 وکٹیں گرنے والی ہیں؟ اسپیکر کو میری بددعا لگ گئی ہے، شیخ رشید

August 24, 2015 5:28 pm0 commentsViews: 25

قومی اسمبلی کے اسپیکر ایاز صادق کیخلاف الیکشن ٹریبونل کا فیصلہ آنے کے بعد حکومت کیلئے کڑا امتحان شروع ہوگیا، نیا اسپیکر لانے کیلئے اعلیٰ سطح پر مشورے شروع کردیے گئے
حکومت کو نئے اسپیکر کے انتخاب کے سلسلے میں مشکلات کا سامنا ہوگا، ایم کیو ایم استعفے دے چکی، تحریک انصاف اب اسمبلیوں میں اکڑ کر آئے گی،حکومت نے نئے اسپیکر کے لیے زاہد حامد، طارق چوہدری، شیخ روحیل اصغر اور پرویز ملک کے ناموں پر غور شروع کردیا، اتحادی جماعتوں سے بھی صلاح مشورے کیے جارہے ہیں
قومی اسمبلی کے اسپیکر کے جانے سے سارانظام دائو پر لگ گیا، نیب اِن ایکشن ہے، آدھی پیپلزپارٹی جیلوںمیں جائے گی(شیخ رشید احمد)عمران خان کے ستارے عروج پر ہیں، حکمرانوں کی مزید دو وکٹیں گر گئیں تو حکومت قائم رہنے کا جواز ختم ہوجائے گا، حاجی عدیل کی ٹی وی پروگرام میں بات چیت
اسلام آباد/مانیٹرنگ ڈیسک( بیورو رپورٹ) قومی اسمبلی ایاز صادق کیخلاف الیکشن ٹریبونل کا فیصلہ آنے کے بعد حکومت کیلئے ایک اور امتحان شروع ہوگیا ہے باوثوق ذرائع کا کہنا ہے کہ تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے عام انتخابات میں دھاندلی کا الزام عائد کرتے ہوئے چار حلقے کھولنے کیلئے درخواست دی تھی جن میں سے دو کا فیصلہ آچکا ہے اور اسپیکر قومی اسمبلی ایاز صادق اپنی اسمبلی کی رکنیت اور اسپیکر شپ سے فارغ ہوچکے ہیں‘ وفاقی دارالحکومت کے باوثوق ذرائع کا کہنا ہے کہ حکومت کی مزید 2 وکٹیں گرنے والی ہیں جس کے بعد حکمرانوں کیلئے مشکلات مزید بڑھ جائیں گی‘ اسپیکر قومی اسمبلی ایاز صادق کی ممبر شپ اور اسپیکر شپ ختم ہونے کے بعد اب حکومت کیلئے بڑا امتحان سامنے آگیا ہے کہ اب اسپیکر قومی اسمبلی کون ہوگا؟ این اے 122 کا فیصلہ اس نشست پر جیتنے والے سردار ایاز صادق اسپیکر قومی اسمبلی کے اہم ترین عہدے پر فائز تھے‘ قومی اسمبلی کے قواعد و ضوابط کہتے ہیں کہ اسپیکر کی نشست خالی ہوجائے تو پارلیمان کے اس اہم ایوان کو فوری طور پر نیا اسپیکر منتخب کرنا ہوگا۔ قومی اسمبلی کا اجلاس جاری ہے تو اسی اجلاس میں اور اگر اجلاس نہیں ہے تو نیا اجلاس بلا کر اسپیکر منتخب کیا جائیگا‘ حکومت کا امتحان کڑا ہے‘ ایم کیو ایم ناراض ہو کر استعفیٰ دے چکی ہے‘ تحریک انصاف اب اسمبلی میں تھوڑا اکڑکر آئیگی‘ نئے اسپیکر کی دوڑ میں جو نام سامنے آرہے ہیں ان میں زاہد حامد‘ طارق چوہدری ‘ شیخ روحیل اصغر اور پرویز ملک ہیں‘ دیکھیں قرعہ کس کے نام نکلتا ہے۔دوسری جانب شیخ رشید نے نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ لگتا ہے کہ اسپیکر کو میری عددعا لگ گئی ہے‘کوئی وقت قبولیت کا ہوتا ہے‘ انہوں نے کہا کہ اسپیکر تو گئے ہیں لیکن سارا نظام بھی دائو پر لگ گیا ‘آدھی پیپلز پارٹی جیلوں میںجائیگی‘ نیب ان ایکشن ہے‘ انہوں نے کہا کہ نواز شریف کیلئے مسائل پیدا ہوگئے ہیں ‘پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے اے این پی کے حاجی عدیل نے کہا کہ تحریک انصاف کے دھرنے کے دوران ملک میں جمہوری نظام کو عدم استحکام کا شکار کرنے کی کوشش کی گئی‘ انہوں نے کہا کہ عمران خان کے ستارے عروج پر ہیں‘ حکومت کی جلد مزید دو وکٹیں گریں گی تو حکومت قائم رہنے کا جواز ختم ہوجائیگا۔

Tags: