فینسی نمبر پلیٹ پولیس کی شہریوں سے لوٹ مار‘250 گاڑیاں پکڑ لیں

August 24, 2015 5:42 pm0 commentsViews: 36

سپریم کورٹ کے احکامات کے بعد علاقہ پولیس نے جرائم پیشہ عناصر کے خلاف کارروائیوں کے بجائے گاڑیوں کو پکڑنا شروع کردیا
ٹریفک پولیس اہلکار بھی فینسی نمبر پلیٹ اور کالے شیشے والی گاڑیوں کو ضبط کرنے کی دھمکی دے کر مالکان سے بھتہ وصول کررہے ہیں
کراچی( اسٹاف رپورٹر) سپریم کورٹ کے احکامات کے بعد ٹریفک پولیس کے ساتھ علاقہ پولیس بھی فینسی نمبر پلیٹ سمیت دیگر قانون کی خلاف ورزی کی مرتکب گاڑیوں کیخلاف سڑکوں پر آگئی‘ علاقہ پولیس نے احکامات کو کمائی کا ذریعہ سمجھتے ہوئے شہر کی سڑکوں پر ملزمان اور دہشت گردوں کو پکڑنے کے بجائے کالے شیشے والی گاڑیوں کو روک کر لوٹ مار شروع کردی ہے جبکہ ٹریفک پولیس کی جانب سے گاڑی کو ضبط کرنے کی دھمکی دے کر بھاری رقوم بطور بھتہ وصول کی جارہی ہے‘ ٹریفک پولیس کا کہناہے کہ 3 روز کے دوران250 سے زائد گاڑیوں کو بند اور سینکڑوں گاڑیوں کے چالان کردیئے گئے ہیں‘ تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ کے احکامات کے بعد شہر بھر میں ٹریفک پولیس نے فینسی نمبر پلیٹ‘ غیر رجسٹرڈ‘ نیلی بتی‘ کالے شیشے‘ غیر ملکی نمبر پلیٹ کی حامل گاڑیوں کیخلاف کریک ڈائون شروع کررکھا ہے‘ ذرائع نے بتایا کہ غیر قانونی نمبر پلیٹ کیخلاف کارروائی کی مجاز صرف ٹریفک کو ہی کارروائی کا حکم ہے تاہم علاقہ پولیس نے احکامات کو اپنی کمائی کا ذریعہ سمجھتے ہوئے شہر بھر میں لوٹ مار کا بازار گرم کردیا ہے۔ ذرائع نے مزید کہا کہ شہر کی پولیس اسنیپ چیکنگ کے نام پر اسٹریٹ کرمنلز‘ دہشت گرداور جرائم پیشہ عناصر کوپکڑنے کے بجائے صرف فینسی نمبر پلیٹ اور کالے شیشے والی گاڑیوں کو روک کر بھتہ وصولی شروع کررکھی ہے اور کاروائی کے دوران حکام کی نظر سے بچنے کیلئے ٹریفک پولیس کے اہلکاروں کو بھی اپنے ساتھ ملا کر سڑک پر کھڑا کررکھا ہے‘ ذرائع نے بتایا کہ احکامات کی پاسداری کرنے والی ٹریفک پولیس کے اہلکار بھی سڑکوں پر گاڑیوں کو پکڑ کر ضبط کرنے اور بھاری چالان کی دھمکی دے کر اپنا بھتہ وصول کرنے کے بعد گاڑیوں کو جانے کی اجازت دینے میں مصروف ہیں‘ مہم کے حوالے سے ٹریفک پولیس کے ترجمان کا کہناہے کہ کالے شیشے والی گاڑیوں کے خلاف کم ازکم500 روپے کا چالان کیا جارہا ہے اور 3 روز کے دوران سینکڑوں گاڑیوں کے چالان کرنے کے ساتھ ان کے شیشے اور نمبر پلیٹ بھی ہٹادی ہیں۔

Tags: