کراچی میں امن مکمل بحال ہوگا اب فرقہ واریت کے خاتمے پر توجہ مرکوز ہوگی‘ چوہدری نثار

August 25, 2015 12:16 pm0 commentsViews: 22

نیشنل ایکشن پلان پر 8 ماہ میں درست طریقہ سے عمل ہوا جس کے باعث ملک کے تمام بڑے شہروں میں سیکورٹی صورتحال بہتر ہوگئی
دہشت گردی کے تمام نیٹ ورکس ختم ہوچکے ہیں‘ بلوچستان میں بھی مذاکراتی عمل شروع ہوچکا ہے‘ وفاقی وزیر داخلہ کی پریس کانفرنس
اسلام آباد( آن لائن) وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے کہا کہ کسی بھی ملک میں سیکورٹی پر سیاست نہیں ہوتی اور نیشنل ایکشن پلان پاکستان کی سیکورٹی پالیسی ہے۔ اس پر سیاست نہ کی جائے، اس وقت ملک میں دہشت گردی کے نیٹ ورک ختم ہو چکے ہیں۔ جبکہ دہشت گردی میں معالی معاونت کے خاتمے کے عمل کو بھی تیز کیا جا رہا ہے۔ نیشنل ایکشن پلان کے بعد انٹیلی جنس کے بنیاد پر 5 ہزار900 آپریشن کئے گئے۔ 62 ہزار کارروائیاں اور 69 ہزار گرفتاریاں ہوئیں۔ ایک ہزار114 دہشت گرد مارے گئے جبکہ 885 دہشت گرد گرفتار ہوئے اور کالعدم تنظیموں کے 7900 لوگ فورتھ شیڈول میں ڈالے گئے۔ کراچی اور بلوچستان میں بہت بڑی تبدیلی آئی ہے۔ کراچی کے امن کو ہر صورت منقطی انجام تک پہنچائیں گے۔ اگلے6 ماہ ہماری فرقہ واریت کے خاتمے پر توجہ ہوگی۔ مدرسے اسلام کیلئے کام کر رہے ہیں انہیں بد نام نہ کیا جائے۔ یہاں وفاقی وزیر پرویز رشید کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے چوہدری نثار نے مزید کہا کہ گزشتہ40 سے50 سال میں قومی سلامتی اور اندرونی پالیسی میں پیدا ہونے والے بگاڑ کو درست کرنے کیلئے عرصہ درکار تھا تاہم قوم، میڈیا اور سول ملٹری اشتراک سے نیشنل ایکشن پلان پر گزشتہ8 ماہ سے درست طریقے سے عمل ہوا جس کے باعث ملک کے تمام بڑے شہروں میں سیکورٹی صورتحال پہلے سے کئی گنا بہتر ہے۔ پاکستان میں61 کالعدم تنظیمیں ہیں جن میں سے ایک واچ لسٹ پر ہے جن کے282 لیڈر مشکوک ہیں۔ شہروں کی حفاظت کے لئے فوج موجود رہے گی۔ اگلے8 ماہ انتہائی اہم ہیں۔ اسلام آباد پولیس کے550 اہلکار کو ٹرپل ون بریگیڈ سے تربیت دی جائے گی۔ تمام صوبوں میں ایک ہزار کائونٹر ٹیرر ازم اہلکار تربیت مکمل کرکے گشت پر مامور ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بلوچستان میں بھی مذاکراتی عمل شروع ہو چکا ہے۔ وہاں500 سے زائد فراری ہتھیار ڈال چکے ہیں۔ داعش پاکستان میں موجود نہیں ہے۔ اگر کوئی اس کا نام استعمال کر رہا ہو یا اس کا حصہ بنے وہ الگ بات ہے۔

کریڈیٹ نہ دینے پر چوہدری نثار
کا وزیراعظم سے شکوہ
اسلام آباد( نیوز ڈیسک) وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے اپنی پریس کانفرنس کے دوران بتایا کہ انہوں نے وزیراعظم محمدنواز شریف سے شکوہ کیا ہے کہ وہ تمام اداروں کو ان کی خدمات کا کریڈٹ دیتے ہیں مگر وزارت داخلہ کا نام نہیں لیتے تو وزیراعظم نے کہا کہ میں اپنی تعریف نہیں کرتاتو آپ کی تعریف کس طرح کروں‘ اس پر وزیر داخلہ نے کہا کہ میں نے وزیراعظم سے کہا کہ آپ ہماری تعریف کردیں گے تو اس طرح آپ کی تعریف بھی ہوجائیگی۔

Tags: