عرب تاجر کو کوڑیوں کے مول دی گئی اراضی کی لیز منسوخ

August 31, 2015 7:11 pm0 commentsViews: 86

زمین سالانہ30 روپے فی ایکڑ کے حساب سے غیر قانونی طور پر99 سال کی لیز پر الاٹ کی گئی تھی
کراچی( نیوز ڈیسک) حکومت سندھ نے متحدہ عرب امارات کے ایک تاجر کو کوڑیوں کے دام لیز پر دی گئی5 ہزار 222 ایکڑ زمین کی الاٹمنٹ 6 برس بعد منسوخ کر دی۔ ایک ارب روپے سے زائد مالیت کی زمین سالانہ 30 روپے فی ایکڑ کے حساب سے محض ایک کروڑ55 لاکھ روپے میں غیر قانونی طور پر 99 برس کی مستقل لیز پر الاٹ کی گئی تھی۔ وزیر اعلیٰ سندھ نے معاملے کی تفصیلی رپورٹ طلب کی تھی۔ اسی دوران چیف جسٹس سپریم کورٹ نے بھی اس پر از خود نوٹس لیتے ہوئے حکومت سندھ سے رپورٹ طلب کر لی ہے۔ متحدہ عرب امارات کے معروف تاجر ناصر عبداللہ حسین لوتھا نے ضلع و تحصیل ٹھٹھہ کے علاقے جھمپیر کی دیہہ کوہستان میں کیٹل فارمنگ کیلئے2009ء میں فی ایکڑ 30 روپے سالانہ کے حساب سے5ہزار 22 2 اراضی99 برس کی مستقل لیزپر تقریباً ایک کروڑ55 لاکھ روپے میں الاٹ کرائی تھی۔ اس وقت ای ڈی او ریونیو نے زمین کی اس وقت مارکیٹ قیمت 2 لاکھ روپے ہونے کی نشاندہی کی تھی۔ اس طرح 2009ء میں 5 ہزار 222 ایکڑ اراضی کی مارکیٹ قیمت ایک ارب4 کروڑ44 لاکھ روپے تھی، لیکن اماراتی تاجر کو تقریباً ساڑھے 98 فیصد رعایت کے ساتھ یہ زمین صرف ڈیڑھ فیصد ادائیگی پر الاٹ کر دی گئی تھی۔

Tags: