لاہور ہائی کورٹ الطاف حسین کی تقاریر نشر کرنے پر پابندی

September 1, 2015 1:59 pm0 commentsViews: 23

وزارت داخلہ اور وزیراعظم کے پرنسپل سیکریٹری کو نوٹس جاری، الطاف حسین کی شہریت سے متعلق ریکارڈ طلب
الطاف حسین فوج کیخلاف تقاریر کررہے ہیں، غداری کا مقدمہ درج کیا جائے، درخواست گزار
لاہور( نیو ز ایجنسیاں) لاہور ہائی کورٹ کے تین رکنی فل بنچ نے ایم کیو ایم کے قائد الطاف حسین کی براہ راست تقاریر نشر کرنے پر پابندی لگادی‘ وزارت داخلہ اور وزیراعظم کے پرنسپل سیکریٹری کو نوٹسز جاری کرتے ہوئے الطاف حسین کی شہریت کا ریکارڈ طلب کرلیا‘ مزید سماعت7 ستمبر تک ملتوی کردی گئی‘ دوران سماعت عدالت سے استفسار کیا گیا کہ بتایا جائے ایم کیو ایم کے قائد الطا ف حسین نے پاکستانی شہریت چھوڑی ہے یا نہیں‘ پیر کے روز لاہور ہائی کورٹ میں ایم کیو ایم کے قائد الطاف حسین کی تقاریر پر پابندی کے حوالے سے4مختلف درخواستوں کی سماعت ہوئی‘ جسٹس مظاہر علی نقوی کی سربراہی میں لاہور ہائی کورٹ کے فل بنچ نے الطاف حسین کی ریاست کیخلاف تقاریر سے متعلق دائر درخواست میں موقف اختیار کیا کہ الطاف حسین اور رابطہ کمیٹی کے ارکان فوج کیخلاف تقاریر کررہے ہیں‘ اس معاملے پر وفاقی حکومت‘ وزارت خارجہ اور وزارت اطلاعات نے نوٹس نہیں لیا‘ جس سے ملک میں انارکی پھیلنے کا خدشہ ہے لہٰذا ان کیخلاف آرٹیکل 6 کے تحت غداری کا مقدمہ درج کیا جائے لاہور ہائی کورٹ کے فل بنچ نے الطاف حسین کیخلاف دائر کی گئی درخواستوں کو ابتدائی سماعت کیلئے منظور کرتے ہوئے ابتدائی سماعت میں الطاف حسین کی براہ راست تقاریر نشر کرنے پر پابندی عائد کردی ۔

Tags: