وفاقی حکومت پر دبائو بڑھانے کا فیصلہ پیپلز پارٹی کا پارلیمنٹ سے مستعفی ہونے پر غور

September 2, 2015 3:55 pm0 commentsViews: 16

آصف زرداری نے پارٹی کے سینئر رہنمائوں سے ٹیلی فون پر مشاورت کرنا شروع کردی‘ دبائوبڑھانے کیلئے خورشید شاہ کو خصوصی ٹاسک دیا گیاہے
پارلیمنٹ سے مستعفی ہو کر وفاقی حکومت کے خلاف تحریک چلانے اور پنجاب میں بلدیاتی الیکشن کے بائیکاٹ کے آپشن پر غور ہور ہا ہے
کراچی( نیوز ڈیسک) پیپلز پارٹی کی جانب سے سخت رد عمل سامنے آنے کے بعد حکمران جماعت مسلم لیگ (ن) کی پریشانی میں اضافہ ہوگیا ہے‘ جبکہ وفاقی حکومت بھی خطرے سے دوچار نظر آتی ہے‘ ذرائع کے مطابق پی پی قیادت نے کرپشن الزامات میں ملوث پارٹی رہنمائوں اور اپنے پسندیدہ افسران کیخلاف کارروائیاں رکوانے کیلئے وفاقی حکومت پر دبائو بڑھانے کا فیصلہ کیا ہے‘ جس کیلئے پارلیمنٹ سے مستعفی ہونے کی دھمکی دینے کا آپشن بھی زیر غور ہے‘ ذرائع کے مطابق پارٹی سربراہ آصف علی زرداری نے اس سلسلے میں پارتی کے سینئر رہنمائوں سے ٹیلی فون پر مشاورت شروع کردی ہے‘ ذرائع کے مطابق پارٹی قیادت نے وفاقی حکومت پر دبائو بڑھانے کیلئے قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر سید خورشید شاہ کو ٹاسک دیا ہے‘ انہیں تمام سیاسی حربے استعمال کرنے کا اختیار دیاگیا ہے‘ ذرائع کے مطابق مشاورتی عمل کے دوران سینئر رہنما اعتزاز احسن سے بھی بات کی گئی ہے‘ رابطے کے دوران پارلیمنٹ سے مستعفی ہوکر وفاقی حکومت کیخلاف تحریک چلانے یا احتجاجاً پنجاب کے بلدیاتی انتخابات کا بائیکاٹ کرنے پر بھی مشاورت کی گئی ہے‘ ذرائع کے مطابق اس حوالے سے پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کی سربراہی میں سی ای سی کا اجلاس بلانے پر غور کیا جارہا ہے‘ جس میں پارلیمنٹ سے مستعفی ہونے یا پنجاب میں بلدیاتی انتخابات کے بائیکاٹ پر کوئی فیصلہ متوقع ہے۔

Tags: