عباسی اسپتال میں مخالفین کو زہریلا انجکشن لگا کر قتل کرنے کا انکشاف

September 2, 2015 4:11 pm0 commentsViews: 69

رینجرز کے ہاتھوں گرفتار اسپتال کے ڈائریکٹر فنانس نے تفتیش کے دوران خوفناک انکشافات کیے ہیں
خواتین ،ڈاکٹرز اور نرسوں کو بلیک میل کرکے زیادتی کا نشانہ بھی بنایا جاتا تھا،ملزم کا بیان
کراچی( اسٹاف رپورٹر) رینجرز کے ہاتھوں گرفتار عباسی شہید کے ڈائریکٹر فنانس فرید الدین کے حوالے سے سنسنی خیز انکشافات سامنے آئے ہیں۔ ایک ابتدائی تفتیشی رپورٹ بھی تیار کی گئی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ ملزم فرید الدین نے جعلی ڈگری کے ذریعے نوکری حاصل کرنے اور جعلی ڈگریاں فروخت کرنے کا اعتراف کیا ہے جبکہ ملزم نے یہ بھی اعتراف کیا ہے کہ وہ علاج یا ایمر جنسی میں آنے والے سیاسی مخالفین کو طبی سہولیات فراہم کرنے کے بجائے زہریلا انجکشن لگا کر قتل کرواتا تھا۔ رپورٹ کے مطابق فرید الدین خواتین ڈاکٹرز اور نرسوں کو بلیک میل اور ہراساں کرکے زیادتی کا نشانہ بناتا اور سیاسی جماعت کے رہنمائوں کے پاس بھیجتا تھا۔ جو خواتین ڈاکٹرز اور نرسنگ اسٹاف تعاون نہیں کرتیں ملزم ان کی تنخواہیں روک لیتا تھا۔ ملزم بھتہ خوری میں بھی ملوث ہے۔ انسداد دہشت گردی کی عدالت نے رینجرز کے ہاتھوں گرفتار عباسی شہید اسپتال کے ڈائریکٹر فنانس فرید الدین کو14 روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کر دیا۔ رینجرز نے3 ماہ قبل عباسی شہید اسپتال کے ڈائریکٹر فنانس کو عباسی شہید اسپتال سے حراست میں لے لیا تھا۔

Tags: