نگرانی کا نیا نظام، شہر کے داخلی و خارجی راستوں پر جدید موبائل اسکینرز نصب

September 2, 2015 4:09 pm0 commentsViews: 44

رینجرز نے سپر ہائی وے ٹول پلازہ، نیشنل ہائی وے گھگھر پھاٹک اور حب ریور روڈ پر اسکینر نصب کر دیئے، گاڑیوں کی مکمل اسکیننگ ہو سکے گی
بارودی مواد، منشیات اور اسلحہ کی ترسیل ناممکن بنا دی، اسکینرز سے کراچی کے داخلی و خارجی راستے محفوظ ہو گئے ہیں، کرنل کلیم
کراچی( اسٹاف رپورٹر) کراچی کے داخلی و خارجی راستوں کو محفوظ بنانے کیلئے سندھ رینجرز نے نگرانی کا نیا نظام متعارف کرا دیا۔ تفصیلات کے مطابق کراچی کے تین داخلی و خارجی راستوں کیلئے موبائل اسکینر نصب کر دئے۔ سندھ رینجرز نے سپر ہائی وے ٹول پلازہ، نیشنل ہائی وے گھگھر پھاٹک اور حب روڈ پر تین موبائل اسکینرز کے ذریعے کراچی میں داخل ہونے والی بڑی اور چھوٹی گاڑیوں کی اسکیننگ شروع کر دی۔ آپریشن انچارج کرنل کلیم کے مطابق کراچی میں لوڈنگ گاڑیوں کے ذریعے اسلحہ اور منشیات کی ترسیل روکنے کیلئے یہ چیکنگ شروع کر دی گئی ہے۔ ان ہیوی اسکینرز کو چین سے در آمد کیا گیا ہے۔ یہ سسٹم ٹرک اسکیننگ وہیکل ہے جسے چار افراد آپریٹ کرتے ہیں۔ اسکیننگ وہیکل کی لمبائی4 میٹر ہے۔ رینجرز کا دعویٰ ہے کہ اس اسکیننگ مشین کی بدولت منشیات اور اسلحہ کی نقل و حرکت میں کافی مدد ملے گی۔ رینجرز ترجمان نے مزید بتایا کہ یہ سرویلنس سسٹم ٹائرز میں چھپی چیزوں کو بھی اسکین کر سکتا ہے۔ اب کراچی کے مرکزی داخلی و خارجی راستے محفوظ ہوگئے ہیں۔ ان راستوں سے بارودی مواد یا اسلحے کی ترسیل ممکن نہیں، یہ سسٹم تمام مال بردار گاڑیوں کی اسکیننگ کرے گا۔ جو بھی اسلحہ یا بارودی مواد شہر میں لانے کی کوشش کرے گا وہ قانون کی گرفت میں ہوگا۔ رینجرز حکام کے مطابق نگرانی کا یہ نظام پشاور اور اسلام آباد کے بعد کراچی میں متعارف کرایا گیا ہے۔

Tags: