حکومت پیٹرول پر ٹیکس سے سالانہ900 ارب روپے کما رہی ہے، خورشید شاہ

September 4, 2015 6:58 pm0 commentsViews: 17

پیٹرولیم بسوں کو جگا ٹیکس کہنے والوں نے سیلز ٹیکس کے نام پر بھتہ ٹیکس لگا دیا، اپوزیشن لیڈر
اسلام آباد( نیوز ڈیسک) قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف خورشید احمد شاہ نے حکومت کی طرف سے پیٹرولیم مصنوعات ٹیکسوں کی شرح بڑھانے پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ پیٹرولیم لیوی کو جگا ٹیکس کہنے والوں نے اب اسی لیوی پر سیلز ٹیکس کی صورت میں بھتہ ٹیکس لگا دیاہے۔ جمعرات کو پارلیمنٹ ہائوس میں میڈیا سے گفتگو میں خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ پیٹرول کی اصل قیمت 40روپے ایک پیسہ بنتی ہے۔ حکومت نے پیٹرولیم لیوی پر بھی سیلز ٹیکس لگا دیا ہے۔ چوہدری نثار اپوزیشن کے زمانے میں اسی لیوی کو جگا ٹیکس کہتے تھے، ن لیگ کی حکومت نے جگا ٹیکس پر بھتہ ٹیکس لگا دیا ہے۔ پیٹرول کی قیمت میں کمی کا فائدہ عوام کو جانا چاہئے۔ اپوزیشن لیڈر نے کہا کہ ہائی اسپیڈ ڈیزل کی اصل قیمت 39 روپے فی لیٹر بنتی ہے۔ حکومت نے اس پر45 روپے فی لیٹر ٹیکس لگا دیا ہے۔ ہائی اسپیڈ ڈیزل سے ٹیکسوں کی مد میں حکومت روز ایک ارب پندرہ کروڑ وصول کر تی ہے۔ پیٹرول سے ٹیکس کے ذریعے 58 کروڑ روپے آمدن ہے۔ حکومت پیٹرولیم مصنوعات کے ذریعے سالانہ 900 ارب روپے ٹیکس کی مد میں کما رہی ہے۔ خورشید شاہ نے کہا ہے کہ ٹیکس ضرور لیا جائے گا مگر غریب کو نہ پیسا جائے، ملک کو سیکورٹی نہیں بلکہ فلاحی ریاست بنائیں۔

Tags: