ٹارگٹڈ آپریشن کے باوجود شہرمیں18بھتہ خور گروپ سرگرم

September 7, 2015 2:54 pm0 commentsViews: 31

شہریوں کو دھمکیاں دیکرماہانہ کروڑوں روپے بھتہ وصول کرنیوالے عناصر بھاری رقم بیرون ملک بھجوانے میں بھی ملوث ہیں، خفیہ اداروں کی رپورٹ
کراچی کی تمام بڑی مارکیٹوں، اہم بازاروں، فیکٹریوں اور دکانداروں سے اب بھی بھتہ وصول کیاجارہا ہے، 10بھتہ خوروں کا تعلق ایک سیاسی جماعت،4کا گینگ وار گروپ،2کا مذہی تنظیم اور 2 کا تعلق کالعدم امن کمیٹی سے ہے
بھتہ خوری کا نیٹ ورک رضویہ ، لیاقت آباد، گلبہار، جوہر آباد، ڈاکس، بریگیڈ اور سولجر بازار کے علاقوں سے چلایاجارہا ہے، خفیہ اداروں کی رپورٹ موصول ہونے کے بعد سیکورٹی اداروں نے بھتہ خوروں کے گرد گھیرا تنگ کردیا
کراچی( کرائم ڈیسک) کراچی میں سیکورٹی فورسز کی جانب سے جاری ٹارگٹڈ آپریشن کے باوجود شہر میں بھتہ خوری جاری ہے۔ بھتہ وصولی کرنے والے عناصر بھاری رقوم بیرون ملک بھجوانے میں بھی ملوث ہیں خفیہ اداروں نے شہر میں بھتہ خوری سے متعلق رپورٹ اعلیٰ حکام کو ارسال کر دی ہے۔ جس کے بعد شہر میں بھتہ خوروں کے خلاف فیصلہ کن کارروائی شروع کرنے کی تیاریاں شروع کر دی گئی ہیں ذرائع کے مطابق حساس ادارے نے شہر میں موجود بھتہ خوری کے منظم نیٹ ورک کا انکشاف کرتے ہوئے مفصل رپورٹ اعلیٰ حکام کو ارسال کر دی ہے۔ 18 بھتہ خور گروپ سر گرم ہیں جو اہم بازاروں، فیکٹریوں اور دکانداروں سے تاحال بھتہ وصولی میں مصروف ہیں۔ 10بھتہ خوروں کا تعلق ایک سیاسی جماعت،4 گینگ وار گروپ 2 کا مذہبی تنظیم اور 2کا کالعدم امن کمیٹی سے ہے۔ بھتہ خور ماہانہ کروڑوں روپے وصول کرنے کے بعد بیرون ملک بھجوانے میں بھی ملوث ہیں اور اس کے لئے سمندری راستوں کے علاوہ ہنڈی کا سہارا لیا جاتا ہے۔ بھتہ خوری کا نیٹ ورک رضویہ، لیاقت آباد، گلبہار، جوہر آباد، ڈاکس، بریگیڈ اور سولجر بازار سے چلائے جانے کا انکشاف ہوا ہے۔ قانون نافذ کرنے والے اداروں نے مفصل رپورٹ موصول ہوتے ہی بھتہ خوروں کے خلاف گھیرا تنگ کرنا شروع کر دیا ہے۔ انتہائی با خبر ذرائع کے مطابق حساس ادارے نے شہر میں2 سال سے جاری آپریشن کے حوالے سے رپورٹ مرتب کرتے ہوئے انکشاف کیا ہے کہ شہر میں بھتہ خوری کا منظم نیٹ ورک تاحال موجود ہے۔ 18 رکنی بھتہ خور گروپ شہر کی تمام مارکیٹوں، دکانداروں، تاجروں، فیکٹری مالکان، سرمایہ کار ، بزنس مین، بلڈرز سمیت دیگر کاروباری شخصیات سے بھتہ وصول کر رہا ہے۔ رپورٹ میں بھتہ خوروں کے نام، والدین کے نام، پتے اورجرائم کی تفصیلات بھی شامل کی گئی ہیں جبکہ ان کا تعلق بھی واضح کیا گیا ہے۔ رپورٹ کے مطابق اویس ولد ساجد 400 کوارٹر رضویہ سے بھتہ نیٹ ورک چلاتا ہے اور اس کا تعلق سیاسی جماعت سے ہے۔ عابد عرف سموسہ ولد منور400 کوارٹر، رضویہ سیاسی، محمد آصف رضا ولد نعمت ناظم آباد سیاسی، محمد عامر ولد عبدالقادر گلبہار سیاسی، اکرم پالش والا لیاقت آباد سیاسی، جاوید کانیہ سکندر آباد سیاسی، شاہد بکک ولد خیر بخش حاجی مراد گوٹھ گلبہار کالعدم پیپلز امن کمیٹی، سلیم بلوچ حاجی مراد گوٹھ گلبہار پیپلز امن کمیٹی، بابر ولد نعیم الدین فیڈرل بی ایریا بلاک 7 جوہر آباد سیاسی ، عارف خان ولد بسم اللہ افغانی مچھر کالونی ڈاکس سیاسی، محمد حنیف ولد محمد رئیس جٹ لین بریگیڈ مذہبی جماعت ، فرحان عرف پپا ولد محمد حنیف جٹ لین، بریگیڈ مذہبی جماعت رفیق بلوچ ولد تھارو لین سولجر بازار لیاری گینگ وار، ذوالفقار مگسی ولد افتخار مگسی تھارو لین سولجر بازار گینگ وار، موسیٰ بلوچ ولد نعیم بلوچ تھارو لین سولجر بازار گینگ وار شامل ہیں۔ حساس اداروں کی رپورٹ موصول ہونے کے بعد بھتہ خور گروپوں کے خاتمے کیلئے فیصلہ کن کارروائی آئندہ چند دنوں میں شروع کئے جانے کا امکان ہے، ذرائع کا کہنا ہے کہ انٹیلی جنس اداروں کو بھتہ خوروں کے خفیہ ٹھکانوں کا پتہ لگانے کاٹاسک دیا گیا ہے۔

Tags: