سہراب گوٹھ مویشی منڈی میں لوٹ مار‘ جانوروں کی قیمتیں بڑھ گئیں

September 7, 2015 3:51 pm0 commentsViews: 108

منڈی میں مک مکا کرکے تاجروں کو مطلوبہ جگہ فراہم کی جارہی ہے‘ پانی فراہم کرنے کے نام پر بھی لوٹ مار کی جارہی ہے
مویشی منڈی میں لائے جانے والے جانوروں کا کوئی چیک اپ نہ ہونے کے باعث کانگو وائرس پھیلنے کا خطرہ
کراچی( سٹی رپورٹر)منڈی مویشیاں سہراب گوٹھ کی انتظامیہ کے ناقص انتظامات نے ملک بھر سے آئے ہوئے ہزاروں بیوپاریوں کو سنگین مشکلات میں مبتلا کردیا، بنیادی سہولتوں کی عدم فراہمی پر بیوپاریوں نے مزید مویشی لانے سے انکار کردیاتفصیلات کے مطابق عیدالاضحی کے موقع پر قربانی کے جانوروں کیلئے کراچی کے علاقے سپرہائی وے پر لگنے والی سب سے بڑی مویشی منڈی میںانتہائی ناقص انتظامات کے باعث ملک بھر سے جانوروں کی فروخت کیلئے آئے ہوئے ہزاروں بیوپاریوں کیلئے سنگین مشکلات کا سبب بن گئے ہیں،ذرائع کے مطابق مویشی منڈی میں من پسند افراد کو نمایاں مقامات پر کیمپ کے علاوہ جانور کھڑے کرنے کی اجازت دید ی گئی ہے جبکہ دیگر بیوپاری جو منڈی کی انٹری کا ٹیکس ادا کرکے آرہے ہیں انہیں دو دراز مقامات پر بھیجا جارہا ہے جس کے بعد مک مکا کر کے انتظامیہ کے افراد مطلوبہ جگہ فراہم کر رہے ہیں،ذرائع کا کہنا ہے کہ مویشی منڈی میں لائے جانے والے جانوروں کا کسی قسم کا کوئی چیک اپ نہیںکیا جارہا ہے جس کے باعث کانگو وائرس سمیت دیگر امراض پھیلنے کا خطرہ ہے۔

Tags: