لاہور ہائیکورٹ الطاف حسین کی تقاریر‘ وڈیوز‘تصویری بیان اورسرگرمیاں نشر اور شائع کرنے پر تاحکم ثانی پابندی

September 8, 2015 1:54 pm0 commentsViews: 33

متحدہ کے قائد کیخلاف آرٹیکل 6 کے تحت کارروائی کی درخواست کی سماعت کے دوران عدالت نے پابندی کے احکامات جاری کردیئے
عدالت نے الطاف حسین کو وکیل کے ذریعے آئندہ سماعت پر جواب جمع کرانے کا حکم دے دیا‘ پیمرا کو بھی طلب کرلیا گیا
لاہور (آن لائن) لاہور ہائیکورٹ نے متحدہ کے قائد الطاف حسین کی تقاریر‘ ویڈیوز‘ تصویریں‘ بیان اور سرگرمیاں نشر اور شائع کرنے پر تاحکم ثانی پابندی عائد کردی،عدالت نے الطاف حسین کو وکیل کے ذریعے آئندہ سماعت پر جواب جمع کرانے کاحکم دیدیا جبکہ ڈی جی پیمرا کو بھی آئندہ سماعت پر طلب کرلیا گیا‘ پیمرا نے عدالت کے حکم پر الطاف حسین کی تقاریر نشر کرنے سے متعلق پابندی کا نوٹیفکیشن عدالت میں جمع کرادیا‘ کیس کی سماعت18 ستمبر تک کے لئے ملتوی کردی گئی۔ گزشتہ روز لاہور ہائیکورٹ میں متحدہ قومی موومنٹ کے قائد الطاف حسین کے خلاف آرٹیکل6 کے تحت کارروائی کی درخواست پر سماعت ہوئی۔ لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس مظاہر کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے سماعت کی۔ عدالت نے الطاف حسین کی تصویر، ویڈیو اور بیان نشر اور شائع کرنے پر پابندی عائد کردی۔ عدالت نے حکم دیا کہ تمام چینلز اور اخبارات تاحکم ثانی الطاف حسین کی تصویر اور بیان یا ایم کیو ایم سے متعلق کسی بھی خبر پر الطاف حسین کی تصویر شائع نہ کریں۔ واضح رہے کہ اس سے قبل الطاف حسین کی تقریر پر بھی پابندی عائد کی جاچکی ہے۔ عدالت نے آئندہ سماعت پر ڈی جی پیمرا کو طلب کرلیا اور اس حوالے سے جواب جمع کرانے کاحکم دیدیا جبکہ الطاف حسین کو بھی وکیل کے ذریعے آئندہ سماعت پر جواب جمع کرانے کاحکم دیا۔ عدالت میں پیمرا نے الطاف حسین کی تقاریر نشر کرنے سے متعلق نوٹیفکیشن بھی جمع کرادیا۔ وفاقی حکومت کے وکیل نے عدالت میں کہا کہ اس معاملے کو سیاست کی نذر نہیں ہونے دیں گے جبکہ ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے کہا کہ معاملہ حساس نوعیت کا ہے حکومت پیمرا قوانین کی خلاف ورزی کسی صورت برداشت نہیں کریگی۔ کیس کی مزید سماعت 18 ستمبر تک کے لئے ملتوی کردی گئی۔

Tags: