پی ٹی وی سے جعلی ڈگری پر 82 ملازمین کی برطرفی

September 8, 2015 2:09 pm0 commentsViews: 23

قومی ادارے کے 2 ارب روپے کا بوجھ اتار دیا، ایم ڈی کی پی اے سی کو بریفنگ
اسلام آباد (نیوز ڈیسک) منیجنگ ڈائریکٹر پی ٹی وی ڈاکٹر عبدالمالک نے پبلک اکائونٹس کمیٹی کو بتایا کہ ادارے سے جعلی ڈگری کے حامل 82افراد کو نکالا ہے لیکن ان کے خلاف ایف آئی آر درج نہیں کرائی۔جس پر کمیٹی نے فوری ایکشن لیتے ہوئے 82 افراد کے خلاف فوری ایف آئی آر درج کرا کے 60 دنوں میں رپورٹ طلب کر لی جبکہ کمیٹی نے ڈی جی پی بی سی کے حکم پر وزیر اعظم کی منظوری کے بغیر 17 ریٹائر ملازمین کو دوبارہ کنٹریکٹ پر رکھے جانے کے حوالے سے اظہار تشویش کرتے ہوئے ہدایت کر دی کہ آئندہ قواعد و ضوابط سے ہٹ کر کے کام نہ کیا جائے شیخ روحیل اصغر نے کمیٹی میں انکشاف کیا ہے کہ پاکستان مونومنٹ میں قواعد و ضوابط سے ہٹ کر فنانس ڈویژن نے ساڑھے تین سو افراد کو بھرتی کیا گیا ہے تحقیقات کرائی جائیں ۔کمیٹی نے حکومت سے سفارش کی کہ پی ٹی وی اور پی بی سی کو حقائق کو مدنظر رکھ کر فنڈز فراہم کئے جائیں ۔پیر کے روز پبلک اکائونٹس کمیٹی کا اجلاس کنونیئر سردار عاشق حسین گوپانگ کی زیر صدارت پارلیمنٹ ہائوس میں ہوا جس میں منیجنگ ڈائریکٹر پی ٹی وی ڈاکٹر عبدالمالک نے کمیٹی کو آڈیٹر جنرل آف پاکستان کی رپورٹ کے حوالے سے آگاہ کیا کہ ماضی میں جو بے ضابطگیاں ادارے میں ہوئیں وہ اب نہیں ہو رہی ہیں حالانکہ آج بھی دن میں بھرتی کے حوالے سے سفارشیوں کے سینکڑوں فون آتے ہیں لیکن میں نظر انداز کر دیتا ہوں ۔پی ٹی وی کو سنبھالے سوا سال ہوا سب سے پہلے پانچ سال کے آڈٹ کا حکم دیا اور چھ سے سات سال کے دوران قومی ادارے پر دو ارب روپے کا بوجھ بھی اتارا ہے۔ پی ٹی وی اب منافع میں جا رہا ہے ۔انہوں نے کہا کہ 2007سے پی ٹی وی کے گریڈ ایک سے لے کر 9 تک کے ملازمین کو عیدی کی مد میں ہر سال4 ہزار روپے دیئے جاتے ہیں ۔

Tags: